فوجی عدالتیں ملک و قوم کیخلاف ہتھیار اٹھانے والوں کیلئے بنیں : نثار

واہ کےنٹ (صباح نےوز) وزیرداخلہ چودھری نثار نے کہا ہے کہ فوجی عدالتیں آئین وقانون کو تسلیم نہ کرنیو الوں اور ملک وقوم کیخلاف ہتھیار اٹھانے والوں کے خلاف بنی ہیںحکومت مدارس کیخلاف کاروائی کا ارادہ نہیں رکھتی تاہم اس حوالہ سے تحفظات رکھنے والوں کے تحفظات دور کئے جائیں گے، پاکستان کو معاشی، اقتصادی، ترقیاتی، لاءاینڈ آرڑر جیسے بے پناہ مسائل درپیش ہیں تاہم بنیادی مسئلہ دہشت گردی ہے جس کیلئے تمام معاشرتی اکائیوں کو متحد ہوکر کام کرنا ہوگا اور اپنی صفوں میں چھپے دہشت گردوں کی پہچان کرنا ہوگی حکومت پاکستان کو پرامن اور پرسکون بنانے کیلئے کوشاں ہیں جس کیلئے معاشرے کے تمام طبقات کو حصہ ڈالنا ہو گا۔ افغان مہاجرین ہمارے بھائی اور دوست ہیں 30 سال سے پاکستان انکی مہمان نوازی کر رہا ہے جب افغانستان میں انتخابات کا قیام عمل میں آسکتا ہے تو افغان مہاجرین کی پاکستان سے واپسی کیوں نہیں ہو سکتی؟ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میںریکارڈکمی موجودہ حکومت کا کارنامہ ہے 30روپے فی لیٹر تک کمی اس سے قبل ماضی میں کسی حکومت نے نہیں کی۔ صحافیوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ انقلاب کی نوید سنانے والے پہلے فوجی حکمران کے ہم پلہ وہم رکاب رہے اور اب حسب روایت سیاسی جماعت بدل کر انقلاب لانے کی باتیں کر رہے ہیں۔
نثار