پسرور میں پولیس تشدد سے ایک شخص کی ہلاکت‘ 2 تھانیدار تبدیل 13 اہلکار لائن حاضر

پسرور (نامہ نگار) ایک ہفتہ قبل پولیس کے تشدد سے ایک شخص کی ہلاکت پر ڈی پی او سیالکوٹ وقار احمد چوہان نے تھانہ سٹی پسرور کے 2اے ایس آئیز تبدیل اور 13کانسٹیبلز کو فوری طور پر لائن حاضر کر دیا ہے۔ علاوہ ازیں گزشتہ روز متوفی غلام فرید کا رسم دسواں احتجاجی جلسہ کی شکل اختیار کر گیا، اس موقع پر سابق ایم پی اے چودھری اقبال کھوکھراور دےگر نے خطاب کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ غلام فرید کی ہلاکت کی جوڈیشل انکوائری کروائی جائے اور متوفی کے ورثاءکو کم از کم 15لاکھ روپے معاوضہ ادا کیا جائے بعد ازاں متوفی کے خاندان کی خواتین نے ڈی ایس پی آفس کے سامنے دھرنا دیا اور سابق ایس ایچ او سٹی عبدالرحمان باجوہ، ایس آئی تجمل اور ہیڈ کانسٹیبل امجد کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ چوہدری محمد اقبال کھوکھر نے اعلان کیا کہ سینکڑوں افراد لاہور پہنچ کر وزیر اعلیٰ آفس کے سامنے احتجاج کریں گے، دوسری طرف ڈی پی او سیالکوٹ وقار احمد چوہان نے تھانہ سٹی پسرور کے دو اے ایس آئزتبدیل اور 13کانسٹیبلز کو فوری طور پر لائن حاضر تبدیل کر دیا ہے۔۔