پاکستان‘ بھارت میں مذاکرات ہی مسائل کا حل ہیں: جسونت

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ) بھارت کے سابق وزیر خارجہ جسونت سنگھ نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات مسائل کے حل کا واحد راستہ ہے، وقت نیوز کے پروگرام ”خارجہ امور“ کے میزبانی جاوید صدیق سے بات چیت کرتے ہوئے جسونت سنگھ نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اگر مذاکرات کی حمایت کر رہی ہے تو مجھے بڑی تکلیف ہو رہی ہے جب مےں وزیر خارجہ تھا تو سابق وزیراعظم واجپائی خود لاہور گئے اور انہوں نے لاہور ڈیکلریشن پر دستخط کئے۔ اظہار خیال کرتے ہوئے جزب المجاہدین کے کمانڈر سید صلاح الدین نے کہا کہ بھارت کشمیر کا مسئلہ حل کرنے مےں مخلص نہیں، مذاکرات سے کچھ حاصل نہیں ہوگا، بھارت المجاہدین کا دباﺅ بین الاقوامی دباﺅ اور پاکستان کی سفارت کاری اسے مجبور کر سکتی ہے کہ وہ مذاکرات سے کشمیر کا مسئلہ حل کرے۔ کمانڈر صلاح الدین نے بھارت کے اس دعوے کو باطل کہہ دیا کہ مقبوضہ کشمیر مےں مجاہدین کی تحریک مذاحمت کمزور ہو رہی ہے، یہ تحریک کمزور پڑ رہی ہے تو بھارت کی ساڑھے سات لاکھ فوج کشمیر مےں کیا کر رہی ہے، سابق سیکرٹری خارجہ سینیٹر اکرم ذکی نے کہا کہ بھارت کی حکومت اور اپوزیشن دونوں پاکستان کے ساتھ نہ تو اچھے تعلقات چاہتی ہےں اور نہ ہی وہ کشمیر کا مسئلہ حل کرنا چاہتی ہےں۔