محفل ذکر و نعت و سماع

محفل ذکر و نعت و سماع

مرزا رضوان
سفیر امن‘ قائد روحانی انقلاب صوفی مسعود احمد صدیقی المعروف لاثانی سرکار
میر تنظیم مشائخ عظام پاکستان چیئرمین‘ بین المذاہب امن اتحاد پاکستان
موجودہ دور میں شیطانیت بہت تیزی سے پھیل رہی ہے عریانی و فحاشی عروج پر ہے اسی لئے گذشتہ کئی سالوں سے حق کا پیغام بھی نہایت تیزی سے عام کرنے کیلئے راہیں کھول دی گئی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار تنظیم مشائخ عظام کے امیر اور لاثانی ویلفیئر فاونڈیشن انٹر نیشنل کے چیئرمین صوفی مسعود احمد صدیقی لاثانی سرکار نے ایک بیان میں کیا۔ انہوں نے کہا جو بھی شخص اللہ و رسول کا قرب حاصل کرناچاہتا ہے اس کی روح میں سرشاری پیدا ہو جاتی ہے ۔ اس کا قلب و نظر مخلوق خدا کی خدمت کی طرف مائل ہو جاتا ہے۔یہ اللہ رب العزت اور اس کے پیارے حبیب حضور نبی کریم کا بے پایاں احسان اور خصوصی انعام ہے کہ فاو¿نڈیشن کے بہت سے ادارے بلاتفریق مذہب و ملت فلاح انسانیت کا فریضہ سرانجام دے رہے ہیں۔ انسان میں ہر وقت دکھی انسانیت کو خوشیوں میں بدلنے کی تمنا ابھرتی ہے کہ کاش اللہ رب العزت اسے ہمت عطا کرے کہ اپنی زندگی میں کوئی کارہائے نمایاں ادا کر سکے۔ اللہ رب العزت نے مجھ پر اس سلسلے میں اپنا خاص فضل و کرم فرمایا ۔ مجدد عصر حضرت پیر سید ولی محمد شاہ صاحب العروف حضور میاں صاحب چادر والی سرکار کی طرف سے رہنمائی حاصل ہوئی۔یوں اللہ و رسول کا قرب ووصل اور دائمی حضوری کا حصول نہایت آسان ہو گیا اور پہلے سے بھی زیادہ شدت سے دکھی انسانیت کی فلاح اور ان کے دکھوں کو خوشیوں میں بدلنے کی طرف مائل ہوا۔ اللہ رب العزت کے فضل سے اس فقیر پر اللہ و رسول سمیت صحابہ کرامؓ اور بزرگان دین کا خاص کرم ہے کہ آج مرشد کی تربیت کے عین مطابق طریقت کے تمام سلاسل کا فیض جاری ہے۔
انہوں نے کہاکہ آج مسلمانوں کو دہشت گرد اور تشدد پسند اس لئے کہا جا رہا ہے کہ موجودہ دور میں ہم نے اللہ کی رسمی کو چھوڑ دیا ہے اور ہم یہ سمجھتے ہیں کہ دین حق کی سربلندی اور اشاعت اسلام صرف جنگوں اور معرکوں کے ذریعے ہی ہوتی ہے ۔ حضور نبی کریم کے زمانے سے لے کر سرکار سیدنا عمر فاروق اعظمؓ کے دور تک مسلمان مسلسل جنگوں میں مصروف رہے لیکن حقیقت سے بہت کم لوگ آشنا ہیں کہ اس دور میں بھی مسلمانوں کی تمام تر جنگیں دفاعی تھیں اور اسلام میں جان و مال اور عزت و آبرو کی حفاظت کو فرض قرار دیا گیا ہے‘ مسلمانوں نے کہیں بھی فتنہ فساد‘ شر اور لڑائی جھگڑا نہیں کیا بلکہ ان کی محبت و خلوص اور احترام آدمیت کے عملی کردار کی وجہ سے لوگوں کے دامن سے جہالت کے اندھیرے ہمیشہ کیلئے چھٹ گئے ۔ آج الحمدللہ اس سرزمین پاک پر مکمل مذہبی آزادی ہے تمام مذاہب اپنے اپنے دینی فرائض مکمل آزادی سے سرانجام دے رہے ہیں۔
صوفی مسعود احمد صدیقی لاثانی سرکار کے یوم ولادت کے سلسلہ میں ہر سال عظیم الشان محفل نعت و سماع اور مذہبی رواداری کے فروغ‘ معاشرے میں امن و محبت کے قیام اور ملکی استحکام کیلئے ”بین المذاہب امن کنونشن“ کا انعقاد کیا جاتا ہے۔ کنونشن میں ثناءخوان‘ علماءو مشائخ عظام‘ خلفاءعظام اور پاکستان میں بسنے والے تمام مذاہب کے سکالرز کثیر تعداد میں شرکت کرتے ہوئے ملی یکجہتی کا عملی مظاہرہ کرتے ہیں مذاہب عالم کا کثیر تعداد میں ایک پلیٹ فارم پر متحد و متفق ہو کر ملکی استحکام کیلئے کی جانے والی کاوشیں قابل ستائش ہےں اسی طرح اس سال 4-5 جولائی بروز جمعرات‘ جمعة المبارک کو پہاڑی گرا¶نڈ پیپلز کالونی نمبر 2 فیصل آباد پاکستان میں امیر تنظیم مشائخ عظام پاکستان صوفی مسعود احمد صدیقی المروف لاثانی سرکار کی زیر صدارت 23ویں سالانہ محفل ذکر و نعت اور ”بین المذاہب امن کنونشن“ منعقد ہو رہا ہے جس میں اندرون و بیرون ملک سے علماءو مشائخ عظام‘ مذہبی سکالرز سمیت مریدین و عقیدتمندوں کی کثیر تعداد شرکت کر رہی ہے۔