پیپلزپارٹی پنجاب نے صوبے میں ہر سطح پرتنظیم سازی مکمل کرنے کے لئے ذیلی تنظیموں کو پندرہ دن کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔

پیپلزپارٹی پنجاب نے صوبے میں ہر سطح پرتنظیم سازی مکمل کرنے کے لئے ذیلی تنظیموں کو پندرہ دن کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔

اس بات کا فیصلہ پیپلز پارٹی پنجاب کی مجلس عاملہ اور پنجاب کونسل کے مشترکہ اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس کی صدارت پارٹی کے صوبائی صدررانا آفتاب احمد خان نے کی۔ اجلاس میں ضلع، تحصیل اور یونین کونسل کی سطح پر موجود تنظیموں کو ہدایت کی گئی کہ وہ تنظیم سازی مکمل کرکے رپورٹ فراہم کریں اور جو تنظیم پندرہ دنوں میں تمام عہدوں پر تعیناتی مکمل نہیں کرسکی، اس کے خلاف کارروائی کی سفارش کی جائے گی۔ اجلاس میں حالیہ ضمنی انتخابات میں پیپلزپارٹی کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومت پر ریاستی مشینری کا الزام بھی عائد کیا گیا۔ اجلاس میں رکنیت سازی مہم کو تیز کرنے اور اکیس جون کو بینظیر بھٹو کے یوم پیدائش کو سادگی سے منانے کی بھی منظوری دی گئی۔ اجلاس کے بعد میڈیا کوبریفنگ دیتے ہوئے پیپلز پارٹی پنجاب کے جنرل سیکرٹری سمیع اللہ خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ نون کے قائد میاں نواز شریف کے حکومت کے خلاف بیانات بلاجواز ہیں۔ عدلیہ کو ہرلحاظ سے اپنی غیرجانب داری ثابت کرنا ہوگی۔ انہوں نے اس موقع پر ضمنی الیکشن میں شکست کھانے والے پارٹی کے صوبائی صدررانا آفتاب احمد خان کے استعفے کی خبروں کی بھی تردید کی۔