ملکی حالات کے پیش نظراہم سیاسی اورحکومتی حلقوں نے دوہزار گیارہ کو انتخابات کا سال قراردیا ہے ۔

ملکی حالات کے پیش نظراہم سیاسی اورحکومتی حلقوں نے دوہزار گیارہ کو انتخابات کا سال قراردیا ہے ۔

روزنامہ نوائے وقت میں شائع ہونیوالی ایک رپورٹ کے مطابق اسلام آباد کے ذمہ دارحلقوں میں نئے انتخابات  پرغوروخوض جاری ہے اور اس حوالے سے دوہزار گیا رہ میں مارچ کے مہینہ کو اہم قرار دیا جارہا ہے ۔ رپورٹ کے مطابق  حکمران جماعت پیپلزپارٹی اور اپوزیشن  خصوصا مسلم لیگ نون اور پنجاب حکومت نے اس حوالے سے غیر محسوس انداز میں تیاری بھی شروع کررکھی ہے ، مذکورہ حلقوں کا کہنا ہے کہ اسلام آباد کی سطح پر خصوصا حکومت کی عدم کارکردگی کا تاثر دن بدن نمایاں ہوتا جارہا ہے جس کی بنیاد پر یہی حل سامنے نظر آرہا ہے کہ ملک میں جاری جمہوری عمل کے تسلسل کے لئے حکومتیں اورسیاسی جماعتیں دوبارہ عوام سے رجوع کریں۔