صدر آصف علی زرداری کا میاں نواز شریف کو ٹیلی فون، آج پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کو پرامن بنانے کی درخواست، جبکہ چودھری شجاعت کا وزیراعظم کا فون سننے سے انکار۔

صدر آصف علی زرداری کا میاں نواز شریف کو ٹیلی فون، آج پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کو پرامن بنانے کی درخواست، جبکہ چودھری شجاعت کا وزیراعظم کا فون سننے سے انکار۔

ذرائع کے مطابق صدرآصف علی زرداری نے مسلم لیگ نون کے قائد کو ٹیلی فون کرکے ان کی خیریت دریافت کی اورآج پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کو پرامن بنانے کے لئے کردار ادا کرنے کی درخواست کی۔ دوسری طرف وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے قومی اسمبلی اورسینیٹ میں اتحادی جماعتوں کے پارلیمانی لیڈروں سے وزیراعظم ہاؤس میں ملاقات کی۔ ملاقات میں وفاقی وزیر تجارت مخدوم امین فہیم ، سینیٹ میں قائد ایوان نئیرحسین بخاری، اے این پی کےسربراہ اسفند یارولی، ایم کیوایم کے ڈاکٹرفاروق ستار، بی این پی کے سینیٹر اسراراللہ زہری، جمہوری وطن پارٹی کے سینیٹرشاہد بگٹی، مسلم لیگ فنکشنل کے جہانگیر ترین، فاٹا سے انجینئرملک راشد خان اور ساجد حسین نے شرکت کی۔ وزیراعظم گیلانی نے مسلم لیگ قاف کے صدر چودھری شجاعت حسین کو بھی ٹیلی فون کیا تاہم انہوں نے وزیراعظم کا فون سننے سے انکار کردیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہےکہ جے یو آئی کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں چوہدری نثارعلی خان،چوہدری شجاعت حسین اورپروفیسرخورشیداحمد سمیت دیگراپوزیشن رہنماوں سے رابطوں کے بعد طے پایا تھا کہ آج کے اپوزیشن اجلاس تک کوئی بھی حکومت سے رابطہ نہیں کرے گا اور اسی وجہ سے چوہدری شجاعت حسین نے وزیر اعظم سے گفتگو سے گریز کیا