سندھ ہائی کورٹ نے سانحہ بارہ مئی کے حوالے سے درخواست سماعت کے لیے بحال کرتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی کردی ۔

سندھ ہائی کورٹ نے سانحہ بارہ مئی کے حوالے سے درخواست سماعت کے لیے بحال کرتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی کردی ۔

مدعی اقبال کاظمی ایڈووکیٹ نے اپنی درخواست میں موقف اختیارکیا کہ ان سےپٹیشن واپس لینے کے لئے زبردستی دستخط کرائے گئے اور اس مقصد کے لئے انہیں جیل میں ہراساں کرنے کے ساتھ ساتھ ان کی اہلیہ کو بھی اغوا کر لیا گیا جبکہ انہوں نے اس حوالے سے عدالت عالیہ کو بھی آگاہ کیا تھا اور استدعا کی تھی کہ اگر انہیں قتل کردیا جائے توبھی درخواست واپس نہ کی جائے۔ سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس مشیر عالم اور احمد علی شیخ پر مشتمل بینچ نے موقف سننے کے بعد پٹیشن بحال کرتے ہوئے سماعت غیرمعینہ مدت تک ملتوی کردی ۔ پٹیشن میں وفاقی اورصوبائی حکومت،سابق صدر پرویزمشرف،متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین، وسیم اختر، ڈاکٹرغلام ارباب رحیم ،غلام محمد محترم ،سابق آئی جی سندھ نیاز احمد صدیقی اوراظہرفاروقی کو فریق بنایا گیا ہے۔