وزیراعظم کے حکم کے باوجود شب قدر پر لوڈشیڈنگ، عوام کا شدید احتجاج

خبریں ماخذ  |  کامرس رپورٹر
وزیراعظم کے حکم کے باوجود شب قدر پر لوڈشیڈنگ، عوام کا شدید احتجاج

لاہور + حافظ آباد (کامرس رپورٹر + نمائندہ نوائے وقت) وزیراعظم کے حکم کے باوجود شب قدر پر ملک بھر میں لوڈشیڈنگ جاری رہی جس پر شہریوں نے شدید احتجاج کیا۔ پشاور میں بدترین لوڈشیڈنگ پر سینکڑوں افراد نے گرڈ سٹیشن کا گھیراﺅ کیا۔ تفصیلات کے مطابق ماڈل ٹاﺅن، گارڈن ٹاﺅن، چونگی امرسدھو سمیت لاہور کے کئی علاقوں میں بجلی باربار بند کی جاتی رہی جس سے عبادت میں مصروف شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جبکہ ملک میں گزشتہ روز بجلی کی قلت کے مجموعی حجم میں 512 میگاواٹ کا اضافہ ہو گیا ہے اور اس کا حجم بڑھ کر 4000 میگاواٹ تک پہنچ گیا۔ انرجی مینجمنٹ سیل کے اعداد و شمار کے مطابق ملک میں بجلی کی طلب 18205 میگاواٹ تک ریکارڈ کی گئی جبکہ اس کے مقابلے میں بجلی کی پیداوار 14245 میگاواٹ رہی۔ شہروں میں 12 گھنٹے سے زائد اور دیہی علاقوں میں 18 گھنٹے سے زائد لوڈشیڈنگ کی گئی۔ بدترین لوڈشیڈنگ کے خلاف لوگ سراپا احتجاج بن گئے اور انہوں نے حکومت کو بددعائیں دیں۔ کمالیہ میں شہریوں نے پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ اور دھرنا بھی دیا گیا۔ حافظ آباد میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ ایک بار پھر 16 گھنٹے سے تجاوز کر گیا جبکہ نماز تراویح کے ساتھ ساتھ سحری و افطاری کے وقت بجلی کی بندش معمول بن گئی جس پر شہری حکمرانوں کو کوسنے لگے۔