جج‘ جرنیل‘ بیوروکریٹس اثاثے ظاہر کریں : کابینہ ۔۔۔ کمیٹی قائم

جج‘ جرنیل‘ بیوروکریٹس اثاثے ظاہر کریں : کابینہ ۔۔۔ کمیٹی قائم

اسلام آباد (نوائے وقت نیوز + ایجنسیاں) وفاقی کابینہ نے ہدایت کی ہے کہ جرنیلوں، ججز، بیوروکریٹس سمیت تمام سرکاری ملازمین اپنے اثاثے ظاہر کریں۔ حکومت نے سیاستدانوں کی طرح ججوں، جرنیلوں سمیت اعلیٰ عہدوں پر فائز شخصیات کو ہر سال اثاثے ظاہر کرنے کا پابند بنانے کے لئے کمیٹی قائم کر دی ہے۔ یہ فیصلہ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔ اس کمیٹی میں سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ اور سیکرٹری کابینہ ڈویژن شامل ہوں گے۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات قمر الزمان کائرہ نے اجلاس کے بعد پریس بریفنگ میں بتایا کہ کمیٹی سے کہا گیا ہے کہ وہ وزارت قانون سے مشاورت کرے اور اس بات کا جائزہ لے کہ اگر قانون سازی کی ضرورت ہے تو وہ اپنی سفارشات پیش کرے۔ انہوں نے کہا کہ بیوروکریٹس سمیت سرکاری خزانے سے تنخواہ لینے والے ججز، جرنیلوں کے اثاثے ظاہر کرنے سے متعلق قانون سازی کی جا سکتی ہے۔ کابینہ اجلاس کے دوران اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کی صرف سول سرونٹس کے اثاثے ظاہر کرنے کی تجویز مسترد کر دی گئی اور کہا کہ فوج اور ججز سمیت تمام ملازمین کے اثاثے ظاہر کئے جائیں۔ وفاقی کابینہ نے ہدایت کی کہ اسٹیبلشمنٹ ڈویژن تنخواہ لینے والے ہر ملازم کے اثاثے پیش کرے۔ اثاثوں کے حوالے سے وفاقی کابینہ کے گذشتہ فیصلے پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے۔ کابینہ نے سی ای سی کے 24 جولائی کے فیصلوں کی منظوری دیدی۔ 30 ہزار ڈیلی ویجز ملازمین کو مستقل کیا جا چکا ہے۔ اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے کابینہ کو بتایا کہ ریگولرائزیشن کرنے کا عمل شروع کر دیا گیا۔ دہشت گردی، انتہا پسندی نے پاکستان کو جو نقصانات پہنچائے اس پر سب کو ملکر مقابلہ کرنے کی درخواست کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ کابینہ اجلاس میں پاکستان اور تیونس کے درمیان معاہدے کی منظوری دی گئی۔ لےٹوےا پاکستان کے درمیان سیاسی سمجھوتے کی منظوری دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ آج بجلی کی پیداوار 14 ہزار 500 میگا واٹ ہے، امید ہے چشمہ پاور پلانٹ آج دوبارہ پیداوار شروع کر دے گا۔ قدرتی آفات کی صورت میں سارک کے ہنگامی پلان میں شرکت کی منظوری دی گئی۔ وزارت پانی و بجلی کے سیکرٹریز کو ریکوری اور چوری کی روک تھام پر نظر رکھنے کی ہدایت کی گئی۔ عید کے بعد توانائی پر کابینہ کا خصوصی اجلاس بلایا جائے گا۔ چیزوں کی سپلائی لائن میں بہتری لائی گئی ہے۔ افراط زر کم ہونے کا مقصد یہ نہیں کہ قیمتیں بھی کم ہو جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ پیاز کی قیمت 11.5 فیصد اور ٹماٹرکی قیمت 11.34 فیصد بڑھی۔ خیبر پی کے کی فصل آنے کے بعد پیاز، ٹماٹر کے دام کم ہو جائیں گے۔ اگلے کابینہ اجلاس سے قبل بلوچستان سے متعلق سفارشات تیار کر لیں گے۔ قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ شیخ رشید نے حکومت کے بارے میں جو باتیں کیں وہ محفلوں میں نہیں کر پاتے۔ شیخ رشید عمران خان کی پارٹی کو تانگہ پارٹی کہتے تھے۔ آج اس کے پائیدان پر کھڑے ہیں۔ اسی لہجے میں گفتگو جاری رہی تو اس لہجے کو کنٹرول کرنا جانتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فیصلہ کر لیا ہے کہ سرکاری خزانے سے تنخواہ لینے والوں کو اثاثے ظاہر کرنا ہونگے۔ جرنیلوں اور ججوں سمیت تمام سرکاری ملازمین کو اثاثے ظاہر کرنا ہونگے۔ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی کی طرح کا فیصلہ اب عدالت سے آیا تو پارٹی سطح پر مزاحمت پر غور ہو گا۔ یوسف رضا گیلانی نے وزیراعظم کی برطرفی پر ٹرین مارچ کی تجویز دی ہے اور اس پر پارٹی غور کرے گی۔ گیلانی نے اپنے خلاف فیصلے پر ٹرین مارچ کیا لیکن وہ ذرا مختصر تھا۔ اسمبلیوں کی مدت میں ایک سال کی توسیع کی تجویز حکومت یا پارٹی کی سطح پر کبھی زیر غور نہیں آئی۔ انتخابات سے فرار نہیں چاہتے الیکشن وقت پر ہونگے۔ قبل ازیں کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزےراعظم راجہ پروےز اشرف نے کہا کہ ملک مےں اب عام انتخابات کی تےارےاں شروع ہو جانی چاہئےں۔انتخابات مےں جو بھی جےتے گا ان نتائج کو تسلےم کےا جائے گا۔ بلوچستان کے عوام کے احساس محرومی کے ازالے کے لئے قوم کی خواہشات اور امنگوں کے مطابق تمام ممکنہ اقدامات کئے جائےں گے۔ وفاق اور صوبے مل کر توانائی بحران کے حل کے لئے کوششےں کر رہے ہےں۔ وزےراعظم نے کہا ملک مےں انتخابات کی تےارےوں کا وقت آگےا ہے۔ پاکستان پےپلز پارٹی صاف شفاف منصفانہ انتخابات پر ےقےن رکھتی ہے۔ عام انتخابات مےں جو بھی سےاسی جماعت جےتے گی اس حوالے سے کھلے دل کے ساتھ نتائج کو تسلےم کےا جائے گا۔ وزےراعظم نے کہا کہ توانائی کے بحران کا حل حکومت کی پہلی ترجےح ہے۔ حکومت اس حوالے سے تمام ممکنہ وسائل کو بروئے کار لانے کے بارے مےں پر عزم ہے۔ وزےراعظم نے توانائی بحران پر مشترکہ مفادات کونسل کے فےصلوں کے بارے مےں اعتماد مےں لےا۔ وزےراعظم نے کہا کہ بجلی کی منصفانہ تقسےم کے لےے کونسل نے وزےر اعلیٰ پنجاب مےاں شہباز شرےف کی پےش کردہ قرارداد کو اتفاق رائے سے منظور کےا ہے۔ ہم صوبوں کے ساتھ ہم آہنگی سے اس معاملے کو حل کرنا چاہتے ہےں۔ وزےراعظم نے کابےنہ کے ارکان کو ےوم آزادی کی مبارکباد بھی دی اور ےوم آزادی کے موقع پر سےاسی رہنما¶ں سے رابطوں کے بارے مےں آگاہ کےا۔ وزےراعظم نے کہا کہ قومی مسائل کے حل کے لئے تمام جمہوری سےاسی قوتوں کو سرجوڑ کر بےٹھنا ہو گا۔ وزےراعظم نے کہا انہوں نے سےاسی رہنماو¿ں بالخصوص وزےر اعلیٰ پنجاب شہباز شرےف سے بات چےت کے دوران قومی معاملات کو مل کر حل کرنے کی کوششوں کا اظہار کےا۔ پنجاب کے وزےراعلیٰ نے مثبت ردعمل کا اظہار کےا۔ انہوں نے کہا کہ لیلتہ القدر پر لوڈ شیڈنگ نہیں کی جا رہی اسی طرح عیدالفطر پر بھی لوڈ شیڈنگ نہیں ہو گی۔ کابینہ نے ملک کی ہندو برادری کو درپیش مسائل اور ان کے تحفظات پر غور کیا۔ وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ ملک میں بسنے والی اقلیتوں کو مکمل آزادی حاصل ہے۔ صدر کی نامزد کمیٹی نے کابینہ کو ہندو برادری کے ایشوز پر بریفنگ دی۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ ہندو برادری مکمل محب وطن ہے۔ وہ یہ مسئلہ بات چیت سے حل کرنا چاہتی ہے۔ وزارت داخلہ نے بتایا ہندو¶ں کی نقل مکانی کی افواہ سوچی سمجھی تھی۔ ذرائع کے مطابق ایف آئی اے کارروائی کر رہی ہے۔ وفاقی سرکاری اداروں، صوبوں سے بجلی واجبات کی ریکوری پر 3 رکنی کمیٹی قائم کر دی گئی۔ کمیٹی پٹرولیم، پانی و بجلی اور خزانہ کے سیکرٹریز پر مشتمل ہو گی۔ کمیٹی کابینہ کے آئندہ اجلاس میں رپورٹ دے گی۔ بلوچستان کے لئے قائم کمیٹی سے مفصل رپورٹ آئندہ اجلاس میں طلب کر لی گئی۔