عمران زرداری کو دوبارہ اقتدار میں لانے کی کوشش کر رہے ہیں: چودھری نثار

عمران زرداری کو دوبارہ اقتدار میں لانے کی کوشش کر رہے ہیں: چودھری نثار

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کسی کے بھی ذہن مےں موجودہ قومی اسمبلی کی مدت مےں اےک سال کی توسےع کا گمان ہے تو نکال دے۔ اسمبلی کی مدت مےں اضافہ کےا گےا تو پوری قوم سڑکوں پر ہوگی۔آئےن کی 18وےں ترمےم کے تحت قومی اسمبلی تحلےل ہونے سے قبل نگران حکومت کے قےام پر کوئی بات نہےں ہو سکتی، ہم اس سلسلے مےں حکومت سے کوئی گفت وشنےد نہےں کرےں گے۔ آئےن کے تحت قائد اےوان اور حزب اختلاف دو دو نام تجوےز کرتے ہےں۔ اختلاف کی صورت مےں حتمی فےصلہ کا اختےار الےکشن کمشن کو چلا جاتا ہے۔ حکومت نے چیف الیکشن کمشنر کے لئے فخر الدین جی ابراہیم کا نام نکلوانے کی 2ماہ تک کوشش کی تھی۔ عمران خان اسی انداز مےں مسلم لےگ (ن) کو تنقےد کا نشانہ بنائے رکھےں اور زرداری حکومت کی مجرمانہ سرگرمےوں پر خاموشی اختےا ر کر لےں تو ےہ بڑی ستم ظرےفی ہے۔ وہ ہر صورت زرداری کو دوبارہ لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ حنےف عباسی کے خلاف کارروائی پر مسلم لےگ(ن) کو شدےد تحفظات ہےں،جلد پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اپوزیشن جماعتوں سے نگران وزیراعظم کے معاملے پر مشاورت شروع کرینگے۔ زرداری کے انتخابات میںکامیابی کے دعویٰ اور حکمرانوںکی مجموعی سوچ پر حیرانگی ہے۔ لگتا ہے زرداری ملکی حالات سے مکمل بے خبر اور لاتعلق ہیں۔ منگل کو پارلیمنٹ ہاﺅس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چودھری نثار نے کہا کہ ہمیں اثاثوں کا طعنہ دینے والے پہلے اپنے اثاثوں کی قوم کے سامنے وضاحت کریں، آج تک یہ وضاحت نہیں ہو سکی کہ ان کے اربوں روپے کا گھر عمران کی بیوی کے پیسوں سے آیا، غیرملکی فلیٹ کی فروخت سے یا شوکت خانم کے زکٰوة کے پیسے سے۔ قوم صرف یہ جاننا چاہتی ہے کہ ایسا شخص جس کا سرے سے کوئی ذریعہ معاش نہیں وہ پورے پاکستان میں کروڑوں روپے خرچ کرکے باقاعدہ پارٹی چلا رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس وقت اندھے گونگے بہرے کو بھی عوامی مسائل کا پتہ ہے، جن پر توجہ دینے کے بجائے ہمیں ہم گول میز کانفرنس میں بلایا جا رہا ہے۔