نیب خیبر پختونخوا متحرک‘ کرپشن کیسوں کی تحقیقات کا حکم

پشاور(بیورورپورٹ)نیب خیبرپختونخوا نے کرپشن اور بدعنوانی کے مختلف کیسوں میں تحقیقات کا حکم دے دیاہے اس حوالہ سے نیب خیبرپختونخوا کے ریجنل بورڈکا اجلاس ہوا جس میں کئی سرکاری حکام اور دیگرکے خلاف کرپشن کے الزام پر تحقیقات کا حکم دیاگیا اجلاس میں منیجنگ ڈائریکٹرشیخ یاسین ٹاون پشاورکیخلاف انکوئری کاحکم دیا گیا ایم ڈی چنارگل اور الیاس حمزہ نے شراکت داروں کے ایک ارب 12 کروڑروپے مبینہ خوردبردکئے ملزمان نے شہریوں کوسرمایہ کاری کے نام پر دھوکہ دیااور لوگوں کاسرمایہ پشاور،مردان،راولپنڈی اوردیگر علاقوں میں کمرشل پراجیکٹس پرلگایا رقم وصول کرنے کے باجود ملزمان نے پلاٹ خریدنے والوں کے نام منتقل نہیںکیا نیب خیبرپختونخوا نے ریوینیو ڈپارٹمنٹ ہری پور کے خلاف بھی تحقیقات کاحکم دیا۔ ریوینیوڈپارٹمنٹ کے کئی افسران پرشاملات میں خردبردکا الزام ہے چارسدہ سب ڈویژن ایریگیشن حکام کے خلاف بھی پرپالائی کینال،تنگی کی تعمیر میں رشوت کے عوض غلط نقشے تیار کرنے کے الزام پر ابتدائی تحقیقات کا حکم دیا گیا سوات ایکسپریس وے کے متاثرین کیساتھ مبینہ دھوکہ دہی کی شکایات پر پی کے ایچ اے حکام اور دیگر کے خلاف تحقیقات کا حکم دیا گیا متعلقہ افراد پرتین سو سے چار سو ملین روپے تک کا خردبردکاالزام ہے۔

نیب خیبرپختونخوا حکم