امجد صابری کا گھر وی وی آئی پی موومنٹ کا مرکز بن گیا، اہل علاقہ پریشان

کراچی (کرائم رپورٹر + این این آئی+آن لائن) کراچی کے علاقے لیاقت آباد 4 نمبر میں واقع امجد صابری کی رہائشگاہ گذشتہ 4 روز سے وی وی آئی پی موومنٹ کا مرکز بنی ہوئی ہے۔ ہر گھنٹے بعد کوئی وی آئی پی شخصیت انکے گھر تعزیت کیلئے آتی ہے اور پولیس سکیورٹی وجوہات کی بنا پر اطراف کی دکانوں کو بند کرادیتی ہے جبکہ اطراف کی گلیوں کو بھی سکیورٹی کے باعث عام افراد کی نقل و حرکت کیلئے بند کردیا جاتا ہے۔ وی آئی پی سکیورٹی انتظامات کی وجہ سے علاقہ مکین سخت پریشان ہیں۔ نہ صرف دکانداروں کا کاروبار متاثر ہو رہا ہے بلکہ عوام کو اپنے روز مرہ کے معمولات میں مشکلات کا سامنا ہے۔ علاوہ ازیں پولیس نے امجد صابری قتل کیس کے چشم دید گواہ سلیم چندا کی حفاظتی تحویل ختم کردی۔ پولیس نے گزشتہ روز سلیم کو تحویل میں لیا تھا، اس دوران امجد صابری پر قاتلانہ حملہ کرنے والے ملزم کے خاکوں کے حوالے سے مدد لی گئی، بعدازاں تحویل ختم کرتے ہوئے پولیس نے گواہ کو نامعلوم حفاظتی مقام پر پہنچا دیا۔ دوسری جانب پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ بطور گواہ سلیم چندا کی جان کو خطرہ ہوسکتا تھا اسلئے اسے تحویل میں لیا گیا۔ کرائم رپورٹر کے مطابق پولیس چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کے صاحبزادے اویس علی شاہ کی بازیابی اور معروف قوال امجد صابری کے قاتلوں کا سراغ لگانے میں ہنوز ناکام ہے۔ دونوں مقدمات میں پولیس کی تفتیش ملزمان کے تصویری خاکے بنانے سے آگے نہیں بڑھ سکی ہے۔ ایس ایس پی سی ٹی ڈی نوید خواجہ ٹیم کے ہمراہ امجد صابری کے گھر گئے اور امجد صابری کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔دریں اثناءایم کیو ایم کے زیر اہتمام امجد صابری کی یاد میں جناح گراﺅنڈ میں شمیں روشن کی گئیں، فاروق ستار نے کہا کہ امجد صابری لیجنڈ تھے برا وقت سب پر آتا ہے کوئی بکھر جاتا ہے کوئی نکھر جاتا ہے امجد صابری نے سبق دیا کہ ہمیں نکھرنا ہے۔ بلدیاتی نمائندوں کو امن عمل میں شامل کر کے دہشت گردوں کا صفایا کیا جا سکتا ہے۔کالعدم تنظیمیں کیمپ لگا کر زکوة جمع کر رہی ہیں کالعدم تنظیمیں زکوة کا پیسہ دہشت گردوں اور قتال کی سوچ پر خرچ کر رہی ہیں، ہمیں اور پاک سر زمین پارٹی کے بڑے رہنماﺅں کو بھی سکیورٹی دی جائے۔

امجد صابری/ گھر