ٹرمپ کا یو ٹرن، مسلمانوں کے خلاف بیان واپس لے لیا مقبولیت میں واضح کمی‘ریپبلکن امیدوار متعصب ہیں صدارت کے اہل نہیں: دوتہائی امریکیوں کی رائے

واشنگٹن + ایڈن برگ (آئی این پی + اے ایف پی) امریکی صدارتی نامزدگی کے ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ نے یو ٹرن لیتے ہوئے مسلمانوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی کا بیان واپس لے لیا۔ امریکی ٹی وی ”سی این این“ کی رپورٹ کے مطابق انہوں نے کہا کہ وہ تمام مسلمانوں کے خلاف نہیں بلکہ صرف ”دہشتگرد ریاستوں“ سے تعلق رکھنے والوں کی امریکی آمد کے خلاف ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے رویے میں مزید نرمی لاتے ہوئے بیان دیا ہے وہ ان ممالک سے بھی مسلمانوں کو امریکہ آمد کی اجازت دینے پر غور کریں گے جہاں دہشتگرد سرگرمیاں جاری ہیں تاہم ان افراد کو سخت سکروٹنی سے گزرنا ہوگا۔ دریں اثناءدو تہائی امریکیوں کا خیال ہے ٹرمپ متعصب ہیں اور صدارت کے اہل نہیں ادھر واشنگٹن پوسٹ اور اے بی سی نیوز سروے کے مطابق 51 فیصد شہریوں کا کہنا ہے کہ وہ ہلیری کو ووٹ دینگے جبکہ 39 فیصد نے ٹرمپ کی حمایت میں ووٹ دینے کا وعدہ کیا ہے۔ دریں اثنا نامور امریکی کالم نگار جارج ول ٹرمپ کی وجہ سے ریپبلکن پارٹی چھوڑ گئے ہیں۔ انہوں نے کہا ٹرمپ نے پارٹی کو نقصان پہنچایا انہیں جیتنا نہیں چاہئے۔
ٹرمپ