ٹی او آر پارلیمانی کمیٹی کی تشکیل اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج

اسلام آباد (وقائع نگار) پانامہ لیکس معاملے کی تحقیقات سے قبل ٹی او آرز طے کرنے کے لئے بنائی گئی پارلےمانی کمیٹی کی تشکیل کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے ایک شہری شاہد اورکزئی کی جانب سے دائر درخواست میں مو¿قف اختیار کیا گیا ہے کہ سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق نے پانامہ پیپرز بل کی ڈرافٹنگ کے لئے بارہ رکنی پارلےمانی کمیٹی تشکیل دی جس کے ارکان کی تعداد 12 ہے جبکہ قواعد کے مطابق پارلےمانی کمیٹی کے ممبران کی تعداد دس سے زیادہ نہیں ہو سکتی۔ کمیٹی میں 7ممبران قومی اسمبلی اور 3 سینیٹ سے ہونے چاہئیں جبکہ موجودہ کمیٹی 7 ایم این اے اور 5 سینیٹرز پر مشتمل ہے۔ عدالت سپیکر قومی اسمبلی کو کمیٹی کا نوٹیفکیشن واپس لینے کے احکامات جاری کرے۔
کمیٹی/ چیلنج