ڈاکٹر عاصم کیس‘ اعجاز چودھری کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست مسترد

کراچی (وقائع نگار)کراچی کی احتساب عدالت نے ڈاکٹر عاصم حسین کے خلاف 462 ارب روپے کے کرپشن ریفرنس کی سماعت یکم جون تک ملتوی کر دی ہے۔ عدالت نے سابق سیکرٹری پٹرولیم اعجاز چودھری کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست بھی مسترد کر دی ہے۔ جمعرات کو کراچی کی احتساب عدالت میں ڈاکٹر عاصم حسین کے خلاف 462 ارب روپے کی کرپشن ریفرنس کی سماعت ہوئی ڈاکٹر عاصم حسین ، سابق سیکرٹری پیٹرولیم اعجاز چودھری ، عبدالحمید صفدر حسین اور سید اطہر حسین عدالت میں پیش ہوئے ۔ سابق سیکرٹری پیٹرولیم نے عدالت میں حاضری سے استثنی کی درخواست پیش کی جسے عدالت نے مسترد کر دیا ۔ ڈاکٹر عاصم کیس میں شریک ملزم عبدالحمید کی جانب سے بتایاگیا کہ میری ضمانت سندھ ہائیکورٹ نے منظور کرلی ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ میرے وارنٹ گرفتاری معطل کئے جائیں اس حوالے سے تحریری درخواست بھی جمع کروادی ہے، عدالت نے مقدمے کی نقول ملزم کے وکیل کو فراہم کرنے کا حکم دے دیا، عدالت نے عبدالحمید پر فرد جرم عائد کرنے سے متعلق سماعت 4 جون اور کرپشن ریفرنس کی سماعت یکم جون تک ملتوی کر دی ۔ احاطہ عدالت میں صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر عاصم حسین نے کہا کہ ان کی جائیداد کے حوالے سے نیب ہی بتا سکتی ہے ، نیب ہر چیز کی کرتا دھرتا ہے ، اس سے ہی اس حوالے سے پوچھیں۔
ڈاکٹر عاصم کیس