امریکی دھمکیوں، ڈرون حملے کےخلاف آج ملک گیر یوم احتجاج ہوگا: مذہبی وسیاسی رہنما

لاہور (خصوصی نامہ نگار+ایجنسیاں) مذہبی و سیاسی جماعتوں کے قائدین اور رہنماﺅں نے کہا ہے کہ امریکہ افغانستان میں اپنی ناکامیوں کو چھپانے کیلئے ڈرون حملے کر رہا ہے، امریکی دھمکیوں اور ڈرون حملے کے خلاف آج (جمعہ) کو ملک گیر یوم احتجاج منایا جائے گا، جماعة الدعوة کی طرف سے لاہور، اسلام آباد، کراچی، حیدرآباد، ملتان، پشاور اور کوئٹہ سمیت پورے ملک میں احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے، ریلیاں نکالی جائیں گی اور جلسوں، کانفرنسوں و سیمینارز کا انعقاد کیا جائے گا،لاہور میں سب سے بڑا مظاہرہ چوبرجی چوک میں ہو گا۔ جمعیت علماءاسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق، جماعة الدعوة کے امیر حافظ سعید، حافظ عبدالرحمان مکی، حافظ عبدالغفار روپڑی، ضیاءاللہ شاہ بخاری، مولانا امیر حمزہ، قاری یعقوب شیخ، مولانا یوسف شاہ ودیگر نے قوم سے اپیل کی ہے کہ وہ ڈرون حملوں کے خلاف ہونیوالے احتجاجی مظاہروں اور ریلیوں میں بھرپور انداز میں شرکت کریں تاکہ دنیا کو پیغام دیا جائے کہ پوری قوم حملوں کے خلاف ہے۔ مولانا سمیع الحق نے کہا کہ ڈرون حملے پاکستان کے خلاف بہت بڑی سازش ہیں۔ ان حملوں کے ذریعہ پاکستان کے امن کو برباد کرنے کی بنیاد رکھی گئی۔ حافظ سعید نے کہا ڈرون حملے ہمارے ملک کی سلامتی و خودمختاری پر حملہ ہیں ،کلمہ طیبہ کے نام پر بنائے گئے ملک کا دفاع ہم سب پر فرض ہے۔وطن عزیزپاکستان کے دفاع کے لئے باہمی اتحاد ویکجہتی کے ساتھ ملک گیر تحریک چلائیں گے۔ سنی اتحاد کونسل آج امریکی ڈرون حملے کے خلاف ملک گیر ”یوم مذمت امریکہ “ منائے گی۔ اس سلسلہ میں جمعہ کے اجتماعات میں امریکی ڈرون حملے کے خلاف مذمتی قرار دادیں منظور کی جائیں گی جبکہ نماز جمعہ کے بعد امریکہ مخالف مظاہرے بھی کئے جائیں گے۔ ادھر ملی یکجہتی کونسل کے صدر صاحبزادہ ڈاکٹر ابوالخیر زبیر، سراج الحق، مولانا احمد لدھیانوی، حافظ حسین احمد، مولانا عبدالغفار روپڑی اور لیاقت بلوچ نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ امریکی ڈرون حملوں کے خلاف ملی یک جہتی کونسل آج ملک بھر میں یوم سیاہ منائے گی جب کہ خطبات جمعہ میں ملکی سالمیت کو درپیش خطرات سے نمٹنے، فرقہ وارانہ اہم آہنگی کے فروغ، مختلف مسالک کے درمیان اعتماد اور تعاون کی فضا پیدا کرنے ضرورت پر زور دیا جائے گا۔
مذہبی/سیاسی بیان