کسی بھی قیمت پر اسرائیل کو خالص یہودی ریاست تسلیم نہیں کرینگے: عرب لیگ

مکہ مکرمہ (نمائندہ خصوصی) عرب لیگ کے سیکرٹری جنرل امر موسیٰ نے واضح کیا ہے کہ کسی بھی قیمت پر اسرائیل کو خالص یہودی ریاست تسلیم نہیں کریں گے امن مذاکرات کی بحالی کے لئے اسرائیل کا یہ مطالبہ تسلیم نہیں کیا جا سکتا۔ اسرائیل امن مذاکرات چاہتا ہے اور نہ ہی فلسطینی ریاست کے قیام پر راضی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیلی دو ریاستوں کے قیام کے حوالے سے کسی بھی بین الاقوامی موقف کو تسلیم نہیں کر رہے۔ مذاکرات کے آغاز کے لئے اسرائیل کو خالص یہودی ریاست کی شرط عائد کرنے کا صاف مطلب یہ ہے کہ وہ اسرائیل میں آباد 20 فیصد عربوں کے حقوق ماننے پر آمادہ نہیں۔ اسرائیل چاہتا ہے کہ اس کے یہاں آباد غیر یہودیوں کو یہودیوں کے برابر حقوق حاصل نہ ہوں۔ دوسرے الفاظ میں اس کا مطلب یہ ہے اسرائیل نسلی و مذہبی تفریق پر مبنی ریاست قائم کرنا چاہتا ہے۔ اسرائیل کو حقیقی فلسطینی ریاست کے قیام کو قبول کرنا ہو گا یہ ریاست 1967ءکے دور کے عرب علاقے میں قائم ہو گی۔ نئی اور پرانی اسرائیلی حکومتوں کے موقف میں کوئی فرق نہیں۔