پاکستان کیساتھ مذاکرات بھارتی ہٹ دھرمی سے سبوتاژ ہوئے: عبدالمجید ترمبو

برسلز (نامہ نگار) کشمیر سنٹر برسلز کے چیف ایگزیکٹو بیرسٹر عبدالمجید ترمبو نے ملکی و غیرملکی صحافیوں کی ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جنوبی ایشیا میں پائی جانیوالی صورتحال پر گفتگو کی اور صحافیوں کے سوالات کے جواب دئیے۔ بیرسٹر ترمبو نے اس موقع پر افغانستان\\\' کشمیر اور خطے میں دہشت گردی اور پسماندگی کے حوالے سے ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بھارت پاکستان کے ساتھ مذاکرات میں مخلص نہیں۔ ہم بھارت سے جامع اور نتیجہ خیز مذاکرات چاہتے ہیں۔ اگر اس میں کوئی ڈیڈلاک آتا ہے تو اس کی ذمہ داری بھارت پر عائد ہوتی ہے جس کی وجہ خطے میں بھارت کی طرف سے بلاوجہ مداخلت ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں انسانی ہلاکتوں اور بالخصوص نوجوانوں کے ساتھ ظلم و زیادتی ایک دردناک کہانی ہے جس سے ہر ذی شعور پریشان ہوجاتا ہے۔ بھارتی فوج کی طرف سے کشمیریوں پر ظلم روزبروز بڑھتا جا رہا ہے لیکن بھارت ٹس سے مس نہیں ہوتا۔ مذاکرات کی میز پر بیٹھ کر ہمیشہ راہِ فرار اختیار کی۔ حالیہ مذاکرات کو بھارت نے اپنی ہٹ دھرمی کی وجہ سے سبوتاژ کیا جس سے کشمیریوں پر گہرے اثرات مرتب ہوئے اور عالمی سطح پر بھی اس کا کوئی مثبت ردعمل سامنے نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر سنٹر مسئلہ کشمیر پر ایک جامع رپورٹ مرتب کریگا اور یورپی یونین اور اقوام متحدہ میں پیش کریگا تاکہ کشمیریوں کو انصاف مل سکے اور انہیں بھارتی چنگل اور ظلم سے آزادی مل سکے۔