پاکستانی فوج ہر صورت حسین حقانی کو سفارت کے عہدے سے ہٹانا چاہتی ہے: امریکی اخبار

واشنگٹن (نمائندہ خصوصی) امریکہ میں پاکستان کے سفیر حسین حقانی نے اس بات کی تردید کی ہے کہ انہیں کسی اور عہدے پر متعین کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسی حکومتی شخصیت نے ابھی تک اس قسم کا کوئی اشارہ نہیں دیا۔ امریکی اخبار بوسٹن گلوب میں شائع ہونے والے ایک آرٹیکل کے مطابق حد سے زیادہ امریکہ نواز ہونے کے الزام کے باعث وہ سفیر کی حیثیت سے اپنی بقا کی لڑائی لڑ رہے ہیں۔ حسین حقانی پر ہونے والی تنقید کا حوالہ دیتے ہوئے اخبار نے لکھا ہے کہ پاکستانی فوج ان کی برطرفی چاہتی ہے۔ ادھر واشنگٹن میں کام کرنے والے ایک امریکی تھنک ٹینک کے مطابق وطن واپسی پر حسین حقانی کا تحفظ خطرے میں ہو سکتا ہے۔ اخبار نے کانگرس کے ایک ذریعے کے حوالے سے لکھا ہے کہ پاکستانی فوج واضح فیصلہ کر چکی ہے کہ حسین حقانی کو امریکہ میں سفیر کے عہدے پر نہیں رہنے دیا جائے گا۔ خارجہ تعلقات سے متعلق امریکی کونسل کے سینئر فیلو ڈینئل مارکی کا کہنا ہے کہ بہت سے پاکستانیوں کا خیال ہے کہ حسین حقانی امریکہ کے بہت قریب ہیں۔ انہوں نے بیشتر وقت ملک سے باہر گزارا ہے اور وہ پاکستانی عوام کی خواہشات سے آگاہ ہی نہیں۔