مسکراہٹیں

٭٭ پاگل خانے سے کامیاب علاج کے بعد پاگل رخصت ہونے گیا تو ڈاکٹر نے پوچھا اب ماشاء اللہ آپ ہشاش بشاش نظر آرہے ہیں۔ یقیناً چھٹی کے بعد آپ خوشی محسوس کر رہے ہوں گے! خاک خوشی محسوس کرنی ہے۔ جب میں یہاں آیا تھا تو امریکہ کا صدر تھا اورآج جب واپس جا رہا ہوں تو عام آدمی کی حیثیت سے، پاگل نے جواب دیا۔

 

٭٭پڑوسن نے نئی نویلی دلہن سے پوچھا ’’شادی سے پہلے تم کیا کرتی تھیں وہ بولی میں لوگوں کے گھروں میں برتن فرش او ر کپڑے دھونے اور کھانا پکانے کا کام کرتی تھی۔
پڑوسن ’’تو پھر یہ تبدیلی اچھی لگی؟‘‘
دلہن :خاک اچھی لگی اب وہی کام بغیر تنخواہ کے کرنے پڑتے ہیں۔

 

٭٭  باپ (بیٹے سے) تم نے تاریخ میں اتنے کم نمبر حاصل کئے؟
بیٹا: پیپر میں سوال ایسے دیئے  تھے جو میری پیدائش سے بھی پہلے کے تھے۔


٭٭ ایک کنجوس شخص کو راہ چلتے سائیکل کا پیڈل ملا۔ وہ اسے اٹھا کر گھر لے گیا اور اپنی امی جان سے کہنے لگا یہ پیڈل سنبھال کر رکھ لیں، اس میں سائیکل ڈلوا لیں گے۔


٭٭مسافر (بابو سے) بابو صاحب پونے تین والی ٹرین کب چلے گی؟
بابو : دو بجکر پنتالیس منٹ پر
مسافر : مجھے پہلے ہی شک تھا کہ اس کا وقت تبدیل ہوجائے گا۔


٭٭ بیٹا (امی سے) آپ ہمیں سکول کیوں بھیجتی ہیں؟ تا کہ تم افسر بن جاؤجواب ملا۔
بیٹا : امی جان ماسٹر صاحب تو ہمیں مرغا بناتے ہیں۔