ذکرِ حسینؓ

تیرا ذکر کروں مجھے ناز ہے
تیرا عشق میری نماز ہے
تو بخش دیتا ہے حُر کو بھی
تو بڑا غریب نواز ہے
حسینؓ بس حسینؓ ہے
حسینؓ بس حسینؓ ہے
تو نبیؐ کی پشت پہ ہو اگر
تو نماز حق بھی رکی رہے
تو حسینؓ ابن علیؓ بھی ہے
تو نماز کی بھی نماز ہے
حسینؓ بس حسینؓ ہے
حسینؓ بس حسینؓ ہے
تو عبادتوں کا سجود ہے
تو شہادتوں کا قیام ہے
تو ولایتوں کا رکوع بھی ہے
تو ہی لاالہ کا راز ہے
حسینؓ بس حسینؓ ہے
حسینؓ بس حسینؓ ہے
ضمیر اے خان ضمیر