انسان کو انسان کی پوجا کرتے دیکھا

انسان کو انسان کی پوجا کرتے دیکھا
تہذیب کے سارے بندھن توڑتے دیکھا
حق کو باطل، باطل کو سمجھتے دیکھا
یہ عظیم ظلم بھی انسان کے ہاتھوں دیکھا
انسان کے لئے انسان کا ایمان بدلتے دیکھا
منافقت کا یہ چہرہ بھی آشکار ہوتے دیکھا
انسان کے لئے انسان سے قطع تعلق ہوتے دیکھا
حکم ربی کو انسان کے ہاتھوں پامال ہوتے دیکھا
پارسائوں کو بھی ظلم پہ ظلم کرتے دیکھا
صلح کا عمل صرف فقیروں سے ہوتے دیکھا
اللہ مرنے سے پہلے انسانوں کو عقل سلیم دے دے
کہ حقوق العباد میں تجھے کوئی رعایت برتے نہیں دیکھا
اے اللہ عمیر نیازی کو سوئی دھاگے کا ہنر دے دے
کہ اس نے ولیوں کو انسانوں کو جوڑتے ہی دیکھا
عمیر عبدالستار نیازی