امت کی پہلی روحانی والدہ محترمہ

مولانا امیر حمزہ   
حضورؐ کی نبوت پر سب سے پہلے ایمان حضرت خدیجہ  ؓ لائیں۔ اس لحاظ سے ہم کہہ سکتے ہیں کہ حضورؐ کی امت کی پہلی مسلمان ایک خاتون ہیں۔  آپ حضور ؐ کی اوّلین زوجہ ہیں اور امت محمدؐ کی پہلی روحانی اماں جان ہیں۔ حضرت خدیجہؓ کا یہ بھی اعزاز ہے کہ جب تک وہ زندہ رہیں اللہ کے رسولؐ نے ان کی موجودگی دوسرے نکاح کا سوچا بھی نہیں۔

افضل ترین اور باکمال خواتین میں شمار
    حضورؐ نے یہ بھی فرمایا کہ دنیا میں چار عورتیں ہی افضل ترین اور باکمال ہوئی ہیں۔   فرعون کی بیوی آسیہ بنت مزاحم، حضرت عیسیٰؑ کی والدہ حضرت مریم،، حضرت خدیجہؓ اور حضرت فاطمہؓ… یاد رہے! چار باکمال عورتوں میں سے دو ماں بیٹی ہیں اور یہ اعزاز بھی حضرت خدیجہؓ  کا ہے۔

حضورؐ حضرت خدیجتہ الکبریٰؓکا ہار دیکھ کر آبدیدہ ہوگئے
    اللہ کے رسول ؐ کو حضرت خدیجہؓ کی یاد کیسے غمزدہ کر دیا کرتی تھی۔ اس کا ایک منظر ہمیں وہ بھی دکھائی دیتا ہے کہ جب حضرت خدیجہؓ کے داماد ابوالعاص کو جو حضرت خدیجہؓ کا بھانجا تھا،  جنگ بدر میں قیدی بنا کر آپ کی خدمت میں  لایا گیا۔  اس دوران حضرت زینبؓ نے اپنے خاوند ابو العاص کو رہا کروانے کے لئے وہ طلائی ہار بھیجا جو انہیں  جہیز میں حضرت خدیجہؓ نے دیا تھا۔ جب یہ ہار حضورؐ کے پاس لایا گیا تو آپ ؐ کی  آنکھوں سے آنسو موتی بن کر رخساروں پر بہنے لگے۔ داڑھی مبارک بھیگنے لگی۔ جانثار صحابہؓ   تڑپنے لگے کہ حضور ؐ  کیوں  غم زدہ ہو گئے ۔ حضورؐ نے فرمایا   ،  جب  خدیجہؓ  نے بیٹی کو رخصت کیا تھا وہ سارا منظر سامنے رکھتے ہوئے خدیجہ یاد آ گئی۔ اس کی چھوڑی ہوئی نشانی یاد آگئی جو ہار  آج میری بیٹی نے بھیجا ہے۔ صحابہؓ کے اصرار پر اللہ کے رسولؐ نے یہ ہار واپس بیٹی زینبؓ  کو بھجوا دیا۔
    حضرت خدیجہؓ کی قبر مبارک مکہ مکرمہ میںقبرستان  معلی  میں ہے۔ یہ تھیں ہم سب مسلمانوں کی اوّلین ماں۔ اتنے اونچے کردار کی حامل اور اللہ کی محبوب بندی اور اللہ کے محبوب حضرت محمد کریمؐ کی محبوب زوجہ محترمہ حضرت خدیجہؓ… جو اللہ کے رسولؐ کے فرمان کے مطابق جنت کے ایک عالی شان اور پرسکون محل میں قیام فرما ہیں۔

حضرت خدیجہ کے بچوں سے محبت
حضرت محمد کریمؐ حضرت خدیجہؓ کے بچوں کو اپنے بچے سمجھتے تھے، ان کی تربیت فرمانے، اپنی ساتھ دستر خوان پہ بٹھا کر کھانا کھلاتے۔ ان سے محبت اور شفقت کرتے، اسی طرح جس طرح سگا باپ کرتا ہے بلکہ حضورؐ سگے باپ سے بھی بڑھ کر اپنی زوجہ محترمہ کے بچوں کو پیار دیتے۔