بجٹ: دو کروڑ روپے سالانہ آمدنی والے افراد کو اضافی ٹیکس دینا پڑیگا

بجٹ: دو کروڑ روپے سالانہ آمدنی والے افراد کو اضافی ٹیکس دینا پڑیگا

اسلام آباد (عترت جعفری) آئی ڈی پیز اور آپریشن ضرب عضب کے اخراجات پورے کرنے کیلئے بجٹ میں اہم اقدام کیا جا رہا ہے جس کے تحت دو کروڑ روپے سالانہ آمدن کے حامل ٹیکس گزاروں کو اپنے پر قابل ادا ٹیکس کے 5 فیصد کے مساوی اضافی ٹیکس ادا کرنا پڑیگا۔ امراء کیلئے یہ اضافی ٹیکس صرف آئی ڈی پیز کی بحالی کے کاموں پر خرچ ہوں گے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ آئندہ بجٹ میں کاروں کی رجسٹریشن پر ٹیکس کو بڑھایا جا رہا ہے‘ تاہم یہ اضافہ صرف نان فائلرز کے لئے ہو گا۔ نان فائلرز کے لئے ود ہولڈنگ ٹیکس کی شرح دوگنا کئے جانے کا امکان ہے۔ کاروں کی درآمد پر کسٹمز ڈیوٹی کے موجودہ شرحوں کو برقرار رکھا جائے گا۔ موبائل فونز کی درآمد کو مزید مہنگا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سستے موبائل فون کی درآمد پر ایک بار کی بنیاد پر عائد ٹیکس کو دوگنا کرنے کی تجویز ہے۔ حکومت نے ایف بی آر کو ہدایت کی ہے کہ جائیداد جس کی مالیت کم ظاہر کی گئی ہو‘ کو ظاہر کردہ مالیت سے 25 فیصد زائد قیمت پر خریدنے کی تجویز کے بارے میں صوبوں سے مشاورت کی جائے۔ صوبے آمادہ ہوئے تو یہ سکیم بجٹ میں لائی جائے گی‘ تاہم اس کا امکان اب کم رہ گیا ہے۔