کریک ڈاﺅن شروع کردیا‘ قومی مجرموں کو نشان عبرت بنائیں گے : وزیراعلی پنجاب

کریک ڈاﺅن شروع کردیا‘ قومی مجرموں کو نشان عبرت بنائیں گے : وزیراعلی پنجاب

لاہور(خبر نگار) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ عوام نے حالیہ عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کو تارےخی مےنڈےٹ سے ہمکنار کےا ہے۔ عوام کی فلاح وبہبود سے بڑھ کر حکومت کی اورکوئی ترجےح نہےںاور اس مقصد کےلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔ مسائل اگرچہ پہاڑ جیسے ہیں لیکن عزم و ہمت کے ساتھ ملک کو اندھیروں سے نکالنے اور اسے ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں رکھا جائے گا۔ توانائی کے بحران پر قابو پانے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کر رہے ہیں۔ چےن کے تعاون سے متبادل ذرائع سے سستی بجلی پےدا کرنے کے منصوبے شروع کرنے پرتیز رفتاری سے کام شروع کردیا گیا ہے۔لوڈشیڈنگ پر قابو پا کرجلد عوام کی عدالت مےں سرخرو ہوں گے۔وزیر اعلی محمد شہباز شریف نے ان خیالات کا اظہار مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔وزیر اعلی سے ملاقات کرنے والے ارکان اسمبلی میں جنید انور، سید وسیم اختر، رائے منصب علی خان ،چودھری شمشاد علی خان، شیخ علاﺅالدین اورکنول نعمان شامل تھےں۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ طلب اور رسد مےں فرق کے علاوہ بجلی و گےس کی چوری اےک اور سنگےن مسئلہ ہے بڑے بڑے لوگ اس جرم میں ملوث ہیں اور بجلی و گیس چور قوم کے مجرم ہیں جنہیں نشان عبرت بنایا جائے گا۔ وزےراعظم محمدنوازشرےف کی ہداےت پر بجلی اور گےس کی چوری مےں ملوث عناصر سے سختی کے ساتھ نمٹاجارہا ہے اور پنجاب مےں بجلی و گیس چوروں کے خلاف کرےک ڈاﺅن شروع کردےا گےا ہے۔ معاشرے کی اےسی کالی بھےڑوں سے کوئی رعاےت نہےں برتی جائے گی۔ انتظامی مشےنری کو واضح ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ بجلی اور گےس کی چوری مےں ملوث عناصر کے خلاف کارروائی مےں کوئی دباﺅ خاطر مےں نہ لایا جائے۔ توانائی کے موجودہ بحران مےں ملک و قوم کو اربوں کانقصان کرنے والے عناصر کسی رعایت اور ہمدردی کے مستحق نہےں ،یہی وجہ ہے کہ بجلی و گیس چوری میں ملوث بڑے مگرمچھوں کو قانون کی گرفت میں لایا جارہا ہے اور بجلی و گیس چوری میں ملوث فیکٹری مالکان کے ساتھ کرپٹ سرکاری افسروں کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے۔ ارکان اسمبلی بجلی و گیس چوروں کے مہم میں ہروال دستے کا کردار کریں۔4ارب روپے کے رمضان پےکےج سے پنجاب بھر مےں قائم 350رمضان بازار وں میںسستے داموں اشیائے ضروریہ پھل اور سبزیوں کی فراہمی یقینی بنائی گئی ہے اس ضمن میںتمام ضلعی اور ڈوےژنل انتظامی افسروں کو سختی سے ہداےات جاری کی گئی ہےں کہ رمضان بازاروں مےں معیاری اشےائے خورد و نوش کی مقررہ قےمتوں پر فراہمی کو ہر قیمت پر ےقےنی بنایا جائے۔ انہوں نے ارکان اسمبلی کو ہدایت کی کہ وہ اپنے اپنے علاقوں میں رمضان بازاروں کا دورہ کریں اوراشیاءضرورےہ کی ارزاں نرخوں پر عوام الناس کو فراہمی کے لئے اقدامات کاجائزہ لیں۔ وزیراعلیٰ نے جنوبی پنجاب کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ رواں مالی سال کے بجٹ میں جنوبی پنجاب کے مختلف منصوبوں کےلئے 93ارب روپے کی رقم مختص کی گئی ہے۔ اس طرح پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت نے جنوبی پنجاب کی ترقی کے لئے گزشتہ برس کی طرح موجودہ بجٹ میں بھی ریکارڈ فنڈز مختص کئے ہیں جو وہاں کی آبادی کے تناسب سے زیادہ ہیں۔ رواں مالی سال کے دوران جنوبی پنجاب کے تمام سکولوں میں عدم موجود سہولیات مہیا کی جائیں گی۔ نئے مالی سال کے بجٹ میں جن ترجیحات کا اعلان کیا گیا ہے وہ مسلم لیگ (ن)کے منشور اور حکومت پنجاب کے وژن کے عین مطابق ہے۔ انہوں نے ارکان اسمبلی کو ہدایت کی کہ وہ عوام سے قریبی رابطہ رکھیں اور ان کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کریں۔ عوام نے ہم پر جس اعتماد کا اظہار کیا ہے ،اس کا تقاضہ ہے کہ منتخب نمائندے وقت ضائع کئے بغیر عوام الناس کی خدمت میں مصر وف ہو جائیں۔ ارکان اسمبلی نے وزیر اعلی کو ترقیاتی سکیموں اور عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں کے بارے میں آگاہ کیا۔ڈینگی کی ممکنہ وبا سے نمٹنے کے لئے انتظامات کا جائزہ لینے کے حوالے سے اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا کہ گزشتہ برس کی طرح سال رواں میں ڈینگی کے حوالے سے تمام صورت حال کنٹرول میں ہے متعلقہ محکموں کے سربراہ اپنے تمام انتظامات مکمل رکھیں، اس ضمن میں کسی بھی قسم کی سستی یا فرائض سے غفلت پرسخت ترین ایکشن لیا جائے گا۔ عید کی تعطیلات کے دوران بھی انسداد ڈینگی کے اقدامات جاری رہنے چاہئیں اس سلسلے میں محکمے اپنا اپنا پلان تیار کریں۔ اجلاس میں وزیر صحت خواجہ سلمان رفیق، ارکان اسمبلی، متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز، ترقیاتی اداروں کے سربراہوں، ماہرین اور متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ انسداد ڈینگی انتظامات کے حوالے سے گزشتہ برس کے تجربے کو مدنظر رکھتے ہوئے اس بار بھی کسی غلطی کی کوئی گنجائش نہیں، تمام متعلقہ محکمے چوکس رہیں۔ نظام کو خودبخود کام کرنا چاہئے، منتخب نمائندے، سرکاری محکمے اور ان کے سربراہ اپنی ذمہ داریوں کا احساس کریں۔ اگر کسی جگہ کوئی خامی پائی جاتی ہے تو اسے از خود دور کیا جائے۔ وزیراعلیٰ نے بعض اداروں کے انتظامات کو غیرتسلی بخش قرار دیتے ہوئے ان اداروں کے سربراہوں ہدایت کی کہ انسداد ڈینگی کے انتظامات کو مزید بہتر بنایا جائے کیونکہ انسانی جانوں کے معاملے پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا ڈینگی وائرس سے نمٹنے کے معاملے میں کوئی غفلت ہرگز برداشت نہیں کی جائے گی۔ انسداد ڈینگی کے بارے میں بھرپور آگاہی مہم چلائی جارہی ہے تاہم ضرورت اس امر کی ہے کہ انسداد ڈینگی انتظامات کے حوالے سے شہریوں کو مزید آگاہی دی جائے کیونکہ شہریوں کی موثر شرکت کے بغیر ڈینگی کے خلاف جنگ نہیں جیتی جا سکتی۔وزیر اعلی نے ہدایت کی کہ قبرستانوں، پارکوں، کباڑخانوں اور نشیبی علاقوں میں بارش کے بعد نکاسی آب کے ہنگامی اقدمات اٹھائے جائیں ان تمام مقامات پر برساتی پانی جمع ہونے کا فی الفور سدباب کیا جائے۔ انسداد ڈینگی کے آلات سٹور کرنے کے لئے وئیرہاﺅس بنایاگیاہے۔ زیرتعمیر عمارتیں ڈینگی مچھر کی پرورش کا بہت بڑا ذریعہ ہوتی ہیں ایسی عمارتوں کا ملبہ صاف کرایا جائے۔ موجودہ موسم ڈینگی مچھر کی افزائش کے موزوں ہے تمام متعلقہ محکموں کو مربوط اور مشترکہ کوششیں کرکے اس کی افزائش کی نرسریوں کو ختم کرنا چاہئے۔وزیراعلیٰ نے ان ڈور اور آﺅٹ ڈور سرویلنس کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ ویکٹر سرویلنس کے لئے تھرڈ پارٹی ویلیڈیشن کے عمل کو مزید موثر بنایا جائے۔انہوں نے کوآپریٹو ہاﺅسنگ سوسائٹیو ں میںصفائی کے انتظامات کو ناقص قرار دیتے ہوئے ہدایت کی کہ ان سوسائٹیوں میں صفائی کی صورتحال فوراً بہتر بنائی جائے۔ وزیراعلیٰ نے سالڈویسٹ مینجمنٹ کو ہدایت کی کہ لاہور میں صفائی کے انتظامات کو بہتر بنایا جائے اور کوڑا کرکٹ والے پلاٹس فوری صاف کرائے جائیں۔انسانی جانوں کا تحفظ اولین ترجیح ہونی چاہئے اور اس ضمن میں سرکاری محکموں کے سربراہ اپنی ذمہ داریوں کا احساس کریں۔ ڈینگی وائرس کے خلاف جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی بلکہ یہ جنگ اس وقت تک جاری رہے گی جب تک پنجاب سمیت پورے ملک سے اس موذی مرض کاخاتمہ نہیں ہو جاتا ،کسی بھی ممکنہ صورتحال سے نمٹنے کے لئے تمام انتظامات مکمل ہونے چاہئیے، ادویات کی دستیابی اور سپرے والے آلات پوری طرح درست حالت میں ہونے چاہئیے۔ ڈینگی لاروا کی نشاندہی اور اس کے خاتمے کے لئے متعلقہ افراد پوری تندہی سے کام کریں۔ انسداد ڈینگی مہم گزشتہ برس کی طرح جاری رہنی چاہئیے۔ انسداد ڈینگی کے لئے مرتب کردہ قواعد و ضوابط پر عملدرآمد نہ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر نے وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف سے ان کی رہائش گاہ پر ون ٹو ون ملاقات کی۔ اس موقع پر ملکی بالخصوص پنجاب کی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیالات کیا گیا۔ ڈاکٹر وسیم اختر نے چولستان تعلیمی پروجیکٹ کو ختم کرنے کی طرف وزیراعلیٰ پنجاب کو توجہ دلائی۔ وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے سیکرٹری ہاﺅسنگ کو ہدایت کی کہ وہ فوری طور پر بہاول پور جا کر جائزہ لیں اور رپورٹ پیش کریں۔ وسیم اختر نے کہا کہ طبی طریقہ علاج اور ہومیو پیتھک طریق علاج کی سرپرستی کی جائے جو ایلوپیتھک کے مقابلے میں نسبتاً کافی سستا طریقہ علاج ہے ماضی میں لوگ بیمار ہونے کی صورت میں اسی طریقہ علاج سے مستفید ہوتے تھے۔ وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف نے کہا کہ پڑھا لکھا چولستان پراجیکٹ کی توسیع کرکے اس کو ہر صورت جاری رکھا جائیگا۔وزیراعلی پنجاب محمد شہبازشریف سے چائنہ پاور انٹرنیشنل ہولڈنگز لمیٹڈ(سی پی آئی ایچ) کے نائب صدر وانگ ژی ینگ نے وفد کے ساتھ ملاقات کی۔ صوبائی وزرا شیر علی خان، محمد شفیق، ایم این اے پرویز ملک، چیئرمین پی اینڈ ڈی، سیکرٹری اطلاعات، سیکرٹری خزانہ، متعلقہ حکام کے علاوہ سی پی آئی ایچ کے عہدیدار یانگ کیان وی، ژاﺅ بنگ شینگ، بائی جن چینگ اور سائنو سندھ ریسورسز کے حکام بھی اس موقع پرموجود تھے۔ پنجاب حکومت اور چائنہ پاور انٹرنیشنل ہولڈنگز لمٹیڈکے درمیان توانائی کے شعبے میں دو طرفہ تعاون پر اتفاق کیاگیا۔وزیر اعلی محمد شہباز شریف نے کہا کہ توانائی بحران کے حل کے لئے چین کے سرماےہ کاروں کا تعاون قابل ستائش ہے۔ پنجاب حکومت چینی سرماےہ کاروں کو توانائی کے شعبہ میں سرماےہ کاری پر خصوصی سہولیات فراہم کرے گی۔ توانائی بحران کا حل حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ متبادل اور قابل تجدید ذرائع سے توانائی کے حصول کےلئے اقدامات کر رہے ہیں۔توانائی بحران سے نجات دلانے کا وعدہ ہر صورت پورا کیا جائے گا۔ وانگ ژی ینگ نے کہاکہ وزیر اعلی شہبازشریف مخلص لیڈر ہیں۔ پنجاب نے شہبازشریف کے دور میں گرانقدر ترقی کی ہے۔ امید ہے شہبازشریف نے جس تیز رفتاری سے میٹروبس پراجیکٹ مکمل کیا اسی تیز رفتاری سے توانائی کے منصوبے بھی مکمل کریں گے۔