ہائیکورٹ نے چیئرمین پیمرا کی بحالی کیخلاف وفاق کی درخواست مسترد کر دی

ہائیکورٹ نے چیئرمین پیمرا کی بحالی کیخلاف وفاق کی درخواست مسترد کر دی

اسلام آباد (خبر نگار) اسلام آباد ہائی کورٹ نے چیئرمین پیمرا چودھری رشید احمد کی بحالی کے فیصلے کو معطل کرنے کے حوالے سے وفاق کی درخواست مسترد کر دی ہے۔ بدھ کو عدالت عالیہ کے جسٹس نور الحق این قریشی نے سماعت کی تو چودھری رشید احمد کے وکیل ادریس اشرف ایڈووکیٹ نے عدالت کو بتایا ان کے سینئر وکیل وسیم سجاد وکلاء ہڑتال کی وجہ سے پیش نہیں ہوئے ، اس سلسلے میں انہوں نے صدر بار سے بھی رابطہ کیا لیکن دوسری طرف سے جواب آیا ہڑتال کی وجہ سے پیش نہ ہوں۔ جسٹس نور الحق این قریشی نے ادریس اشرف سے کہا کہ موجودہ صورتحال سے عدالت کو آگاہ کیا جائے۔ ادریس اشرف ایڈووکیٹ نے فاضل جج کو بتایا کہ عدالتی فیصلے کے بعد چوہدری رشید احمد نے بطور چیئرمین پیمرا چارج سنبھال لیا ہے۔ اس موقع پر وفاق کی جانب سے ایڈیشنل اٹارنی جنرل افنان کریم کنڈی نے کہا کہ چودھری رشید احمد کی بحالی کا فیصلہ حقائق کے منافی ہے ، انہوں نے بطور سیکرٹری اطلاعات اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے چیئرمین پیمرا تعیناتی کے لئے اپنے نام کی خود سفارش کی لیکن میں اس بحث میں نہیں پڑنا چاہتا ۔ یہ بات بہت عجیب ہے کہ تحریری فیصلے کے بغیر ہی چودھری رشید احمد نے چیئرمین پیمرا کا چارج سنبھال لیا جبکہ حکومت نے ابھی نوٹیفکیشن بھی نہیں کیا۔ اس پر جسٹس نور الحق این قریشی نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عدالتی فیصلے پر عملدرآمد کے لئے حکومت کو نوٹیفیکیشن کی ضرورت نہیں ، چودھری رشید احمد نے عدالتی فیصلے پر عملدرآمد کے لئے نہیں بلکہ عہدے پر بحالی کی درخواست دائر کی تھی جو منظور کی گئی۔