پانامہ لیکس والے جان چھوڑ دیں عید کے بعد ملین مارچ ہوگا واہگہ طورخم سرحد پر جائینگے:دفاع پاکستان کونسل

پانامہ لیکس والے جان چھوڑ دیں عید کے بعد ملین مارچ ہوگا واہگہ طورخم سرحد پر جائینگے:دفاع پاکستان کونسل

گوجرانوالہ + قلعہ دیدار سنگھ (نمائندہ خصوصی + نامہ نگار) مذہبی و سیاسی جماعتوں کے قائدین نے دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے پانامہ لیکس والے ملک کی جان چھوڑ دیں‘ لندن اور واشنگٹن جاکر اپنا علاج کرائیں۔ دفاع پاکستان کی بجائے پارلیمنٹ میں تماشے لگاکر ملک کی بدنامی کا سلسلہ بند کیا جائے۔ اسلام آباد میں 58 ایکڑ زمین پر امریکی سفارت خانہ کے نام پر فوجی اڈا تعمیر کیا جا رہا ہے۔ کشمیر و افغانستان میں ناکام جنگیں لڑنے والے پاکستان کے خلاف معاہدے کر رہے ہیں۔ بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر سے نکل جائے۔ اقلیتوں پر ظلم اور گائے ذبح کے نام پر مسلمانوں کا قتل عام بند کیا جائے۔ امریکہ افغانستان میں اپنی شکست یاد رکھے۔ پاکستان کے خلاف جارحیت کی تو یورپی یونین بعد میں بکھرے گی امریکی یونین انشاء اللہ پہلے ٹوٹ جائے گی۔ امریکی خارجہ پالیسی تباہ ہو گئی۔ دفاع پاکستان کونسل پوری قوم کو متحد کر رہی ہے۔ 18کروڑ عوام افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق، حافظ محمد سعید، مولانا فضل الرحمان خلیل، حافظ عبدالرحمان مکی، پیر سید ہارون گیلانی، عبداللہ گل، پیر سید محفوظ حسین مشہدی، قاری محمد یعقوب شیخ، مولانا عبدالرئوف فاروقی، مولانا عبدالوہاب روپڑی، مولانا شوکت نصیر، بلال قدرت بٹ، مولانا رمضان منظور و دیگر نے شیرانوالہ باغ میں ہونے والی دفاع پاکستان کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ شہر اور گردونواح سے دفاع پاکستان کونسل میں شامل جماعتوں کے ہزاروں کارکنوں اور تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی۔ دفاع پاکستان کونسل کی قیادت اور ہزاروں افراد نے شیرانوالہ باغ میں روزہ افطار کیا اور حافظ محمد سعید کی امامت میں نماز مغرب ادا کی گئی۔ مولانا سمیع الحق نے کہا پاکستان کو غیرمستحکم کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ جس نے بھی مذاکرات کی کوشش کی‘ اس پر ہی ڈرون حملے کئے گئے۔ سیاسی جماعتیں امریکہ کی ناراضگی کے ڈر سے خاموش ہیں اور امریکی و بھارتی جارحیت کے خلاف آواز بلند نہیں کی جارہی۔ ہم دہشت گردی روکنے والے ہیں‘ پھیلانے والے نہیں۔ حکمران اپنی پالیسیوں پر نظر ثانی کریں۔ عید کے بعد بھی پورے ملک میں تحریک جاری رکھیں گے۔ ہم ملین مارچ بھی کریں، واہگہ اور طورخم کی سرحد پر بھی جائیں گے۔ حافظ محمد سعید نے کہا امریکہ اسلام آباد میں پختہ مورچے بنارہا ہے اور اینٹی اٹامک سسٹم لگایا جارہا ہے۔ یہ بہت بڑی پلاننگ کا حصہ ہے۔ اللہ کے دشمنوں نے مل کر پاکستان کو نشانہ بنا لیا ہے۔ بہت خوفناک منصوبے بنائے جارہے ہیں اور پاکستان کے خلاف معاہدے کئے جارہے ہیں۔ ایک بڑی جنگ کی تیاری ہو رہی ہے۔ جو امریکہ اور اس کے اتحادی افغانستان میں نہیں کر سکے‘ وہ انڈیا کی سرزمین استعمال کرتے ہوئے کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ ہم ایک مرتبہ پھر کہتے ہیں پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو نقصان پہنچانے، پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ اور اسلام پسندوں کے خلاف کارروائی کی سازشیں کی جارہی ہیں۔ میں پیغام دینا چاہتا ہوں اسلام آباد کے حکمران یاد رکھیں یہ ملک کے دفاع کا مسئلہ ہے۔ پارلیمنٹ میں تماشے لگانا بند کرو۔ پانامہ لیکس سے ملک بدنام ہو رہا ہے۔ جس کا نام پانامہ لیکس میں ہے‘ وہ ملک کی جان چھوڑ دے۔ حکمران نااہل ہو چکے۔ یہ ملک کا دفاع نہیں کر سکتے۔ اللہ کیلئے جان چھوڑو۔ ملک کے دفاع کیلئے مسلمانوں کو متحد ہونے دو۔ افواج پاکستان، ملک کی تمام دینی و سیاسی جماعتوں اور تمام طبقے دفاع کے مسئلہ پر ایک ہو جائیں۔ مودی سن لو ایک ڈرون بھی آیا تو پاکستان سے ہندوستان کے ہر شہر میں ڈرون برسیں گے۔ تم سے کشمیر میں دو فدائی نہیں سنبھالے گئے۔ مولانا فضل الرحمن خلیل نے کہا غزوہ ہند ہوکر رہے گا اور بھارت ٹوٹ جائے گا۔ بلوچستان میں ڈرون حملہ اور طورخم بارڈر پر حملے بہت بڑی سازش ہے۔ عیدالفطرکے بعد بھی بھرپور تحریک جاری رکھیں گے۔ پیر سید ہارون علی گیلانی نے کہا آج کا اجتماع یہ بات ثابت کر رہا ہے پاکستان آج بھی نظریاتی ملک ہے اور جغرافیائی و نظریاتی دفاع کرنے لئے میدان میں ہیں۔ عبداللہ گل نے کہا پاکستان میں دنیا کا سب سے بڑا سفارتخانہ نہیں بلکہ امریکی ٹھکانہ بنایا جا رہا ہے۔ جاسوسوں کی سولہ مختلف بلڈنگز تعمیر کی جا رہی ہیں۔ یہ سب کس کی ایماء پر ہو رہا ہے؟ فوجی اڈا بنانے کی اجازت پاکستان میں کس نے دی؟ کیا برطانیہ کے بعد پاکستان کیلئے کوئی نئی سازش تیار ہے؟ ڈرون حملوں کے خلاف قومی اسمبلی میں آواز بلند کی جائے اور ڈرون گرانے کا حکم دیا جائے۔ پاکستان کے خلاف جو بھی صف بندی کرے گا‘ اسے دندان شکن جواب دیا جائے گا۔ رانا شوکت نصیر نے کہا امریکہ‘ انڈیا‘ اسرائیل کا گٹھ جوڑ پاکستان کی جغرافیائی و نظریاتی سرحدوں کی طرف دیکھیں گے تو دفاع پاکستان کونسل کے قائدین کے ایک حکم پر ملک کیلئے جانیں قربان کریں گے۔ بلال قدرت بٹ نے کہا لبرل پاکستان کے تشخص کو مٹانا چاہتے ہیں۔ مولانا عبدالوہاب روپڑی‘ مولانا رمضان منظور و دیگر نے کہا پاکستان رمضان میں بنا اور آج رمضان میں ہی ملک کے دفاع کیلئے نکلے ہیں۔ قیام پاکستان کے وقت جو نعرہ لگایا تھا‘ اس کی تکمیل ہونی چاہئے۔ آئی این پی کے مطابق حافظ محمد سعید نے خیبر پی کے میں 2500 خاندانوں کیلئے عید پیکیج کی روانگی کے موقع پر گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ اسلام اور پاکستان دشمن عناصر کو اسلامی بنیادوں پر کام کرنے والی این جی اوز پسند نہیں۔ جماعۃ الدعوۃ ہندوئوں‘ عیسائیوں اور دیگر مذاہب کے لوگوں کی مدد بھی انسانی بنیادوں پر کر رہی ہے۔ لوگو ں کی محرومیاں دور کرنے سے سازشوں اور بیرونی مداخلت کے دروزے بند کئے جا سکتے ہیں۔