سندھ ہائیکورٹ میں لاپتہ افراد کے اہلخانہ کی کفالت سے متعلق کیس کی سماعت پچیس جون تک ملتوی کردی گئی ہے۔

سندھ ہائیکورٹ میں لاپتہ افراد کے اہلخانہ کی کفالت سے متعلق کیس کی سماعت پچیس جون تک ملتوی کردی گئی ہے۔

کیس کی سماعت چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ جسٹس سرمد جلال عثمانی اور جسٹس زاہد حامد پرمشتمل ڈویژن بینچ نے کی۔ سماعت کے دوران وزارت خارجہ کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ سیف اللہ پراچہ، ماجد خان اورڈاکٹرعافیہ صدیقی کی وطن واپسی کیلئے کوششیں کی جارہی ہیں۔
درخواست گزار نثار اے مجاہد نے عدالت عالیہ کو بتایا کہ انکی درخواست لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے نہیں بلکہ انکے اہلخانہ کی کفالت سے متعلق ہے اوراس کے بارے میں عدالت کو آگاہ کیا جائے۔ درخواست گزار نے عدالت سے یہ بھی استدعا کی کہ گوانتا نامو بے، بگرام ائیر بیس اور پاکستان سے گمشدگی کے بعد بازیاب ہونے والے افراد کی بھی کفالت کی جائے۔ کیس کی سماعت پچیس جون تک ملتوی کردی گئی۔