ارسا اجلاس : پنجاب‘ سندھ کا شدید احتجاج ۔۔۔ چشمہ‘ جہلم لنک کینال بند رکھنے کا فیصلہ

اسلام آباد (خبر نگار خصوصی) انڈس ریور سسٹم اتھارٹی (ارسا) نے سندھ کے شدید احتجاج پر چشمہ جہلم لنک کینال کو عارضی طور پر بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ سندھ اور پنجاب کے لئے پانی کا حصہ بڑھا دیا ہے۔ گذشتہ روز چیئرمین ارسا امان گل خٹک کی سربراہی میں ارسا کا خصوصی اجلاس ہوا۔ جس میں پنجاب اور سندھ کے درمیان پانی کی تقسیم کے تنازعہ کو حل کرنے کی کوشش کی گئی۔ اجلاس میں ارسا کے پنجاب کے نمائندے شفقت مسعود نے شرکت نہیں کی۔ اجلاس میں پنجاب اور سندھ کے درمیان پانی کے تنازعہ کو حل کرنے کے لئے مختلف منصوبوں پر غور کیا گیا۔ اجلاس میں پنجاب کے لئے پانی کا حصہ ایک لاکھ کیوسک سے بڑھا کر ایک لاکھ سولہ ہزار کیوسک جبکہ سندھ کے لئے پانی کا حصہ نوے ہزار کیوسک سے بڑھا کر ایک لاکھ کیوسک کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ منگلا ڈیم سے پانی کا اخراج دس ہزار کیوسک سے بڑھا کر 48 ہزار کیوسک‘ تربیلا ڈیم سے پانچ ہزار کیوسک بڑھا کر 95 ہزار کیوسک کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ صوبہ خیبر پی کے کو چار ہزار اور بلوچستان کو ایک ہزار کیوسک پانی فراہم کیا جائے گا۔ ارسا ذرائع کے مطابق اجلاس میں شامل صوبہ سندھ کے نمائندے نے شدید احتجاج کیا جس پر چشمہ جہلم لنک کینال کو عارضی طور پر بند کردیا گیا جبکہ پنجاب کے نمائندے نے احتجاجاً ارسا اجلاس میں شرکت نہیں کی۔