فلور ملز مالکان نے گندم سستی ہونے کے باوجود آٹے، میدے کی بوری 50 روپے مہنگی کردی

فلور ملز مالکان نے گندم سستی ہونے کے باوجود آٹے، میدے کی بوری 50 روپے مہنگی کردی

لاہور (کامرس رپورٹر+ ثناء نیوز)  ناجائز منافع خور فلور ملز مالکان نے بوری گندم کی قیمتوں میں کمی کے باوجود 50کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت میں 50روپے کا اضافہ کردیا ہے۔  لاہور میں ملز مالکان ایسوسی ایشن  کے اجلاس کے دوران پیٹرول اور بجلی کی قیمتوں کو جواز بناتے ہوئے  آٹے کے 50کلو کی بوری کی قیمت 50روپے بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا جس کے بعد 50کلو آٹے کی بوری کی قیمت 3ہزار 850روپے سے بڑھ کر 3ہزار 900روپے ہو گئی۔ ملز مالکان نے موقف اختیار کیا حکومت کی جانب سے پیٹرول، ڈیزل اور بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا جس کے باعث اوپن مارکیٹ میں گندم کی قیمت میں بھی اضافہ ہوا۔ لہٰذا آٹے کی قیمت میں اضافہ ناگزیر ہے۔ دریں اثناء پنجاب میں گندم کی نئی فصل آنے کے 15 دن سے 20 دن قبل فلور مل مالکان نے ایک ماہ میں دوسری مرتبہ 84 کلو میدہ فائن کی بوری کی قیمت میں بھی 50 روپے اضافہ کر دیا جس سے اسکی قیمت 3850 روپے سے بڑھ کر 3900 روپے ہو گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق میدے فائن کی قیمتوں میں اضافے کیلئے فلور مل مالکان کے اجلاس میں 2 گروپ بن گئے جن میں ایک گروپ کا موقف تھا کہ آئندہ 15 سے 20 دنوں میں مارکیٹ میں نئی گندم آنے والی ہے جبکہ سندھ میں گندم مارکیٹ میں آ چکی ہے۔ یہ وقت گندم کی مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا نہیں ہے جبکہ دوسرے گروپ کا موقف تھا کہ چوکر کی قیمتوں میں کمی کے باعث میدے فائن کی قیمتوں میں 50 روپے بوری اضافہ ناگزیر ہے۔