برابری کے تعلقات چاہتے ہیں‘ بھارت پاکستان میں مداخلت اور دشمنی بند کرے: عبدالباسط

برابری کے تعلقات چاہتے ہیں‘ بھارت پاکستان میں مداخلت اور دشمنی بند کرے: عبدالباسط

نئی دہلی (نیوز ڈیسک+ نوائے وقت رپورٹ) نئی دہلی میں پاکستانی ہائی کمشن کی طرف سے سرکردہ شخصیات کے اعزاز میں افطار ڈنر دیا گیا جس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے کہا کہ ہمسایہ ملکوں سے امن، پائیداری اور برابری کے تعلقات چاہتے ہیں، تنائو سے ہٹ کر پاک بھارت تعاون کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر سمیت تمام تنازعات کے حل سے خطے میں استحکام کا دور شروع ہو گا۔ ہم پوری دنیا میں امن چاہتے ہیں، دونوں ممالک میں کشیدگی سے پاک اور تعاون پر مبنی تعلقات کیلئے ملکر کام کرنا چاہئے، ہمیں اپنے تمام مسائل حل کرنا ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پرامن ملک ہے اور امن پر یقین رکھتا ہے۔ پاکستان بھارت کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتا ہے، بھارت پاکستان دشمنی بند کرے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کو پاکستان میں مداخلت روکنی ہو گی۔ بھارتی میڈیا نے دعویٰ کیا کہ سینئر حریت رہنما علی گیلانی نے ناسازی طبع کے باعث افطار ڈنر میں شرکت نہیں کی، انکی نمائندگی ایاز اختر اور انکے سرینگر سے آئے ساتھیوں نے کی۔ اسکے علاوہ میر واعظ عمر فاروق اور یٰسین ملک سمیت بڑے کشمیری رہنما بھی دعوت افطار میں نظر نہیں آئے۔ اطلاعات کے مطابق پاکستانی ہائی کمشن نے اس مرتبہ کسی سرکاری یا سیاسی بھارتی شخصیت کو بھی افطار ڈنر میں مدعو نہیں کیا تاہم بھارتی حکومت اور میڈیا کو یہ دعوت افطار پھوڑے کی طرح دکھتا رہا، خاص طور پر پامپور میں سی آر پی ایف کی بس پر حملے کے بعد اس درد میں کئی گنا اضافہ ہو گیا۔