پنجاب اور سندھ میں فیصد پانی کی کمی ہے‘ بحران ایک ہفتے میں ختم ہو جائیگا: سینئر وزیر راجہ ریاض

ر (کامرس رپورٹر) پنجاب کے سینئر وزیر راجہ ریاض نے پنجاب اسمبلی میں اجلاس کے دوران تسلیم کیا ہے کہ پنجاب اور سندھ میں پانی کی 32 فیصد کمی ہے تاہم تربیلا سے پانی چھوڑ دیا گیا ہے۔ پرسوں شام تک پانی پہنچ جائیگا۔ امید ہے کہ پانی کا یہ بحران ایک ہفتے میں ختم ہوجائیگا۔ انہوں نے کہا کہ مئی اور جون میں موسم غیرمعمولی ٹھنڈا ہونے کی وجہ سے پہاڑوں پر برف پگھلنے کا عمل متاثر ہوا اور دریاﺅں میں پانی کا بہاﺅ بہت کم ہوگیا۔ پانی کی کمی تقریباً ایک ہفتے تک رہنے کا امکان ہے۔ محکمہ موسمیات کی پیشن گوئی کے مطابق 25 جون سے دریاﺅں میں پانی کے بہاﺅ میں بتدریج بہتری آئیگی۔ انہوں نے کہا کہ پانی کی صورتحال پر صدر آصف علی زرداری نے کراچی میں اجلاس طلب کیا اور کہا کہ تربیلا کا لیول 1375 فٹ تک پہنچ گیا ہے لہٰذا 1380 فٹ کا انتظار نہ کیا جائے اور پانی کھول دیں جس پر واپڈا اور ارسا نے اعتراض نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ پنجاب کا حصہ ہمارے ہوتے ہوئے کوئی نہیں لے سکتا۔ اگر بلوچستان اور سندھ کے وزراءاعلیٰ ہمارے وزیراعلیٰ سے درخواست کریں اور جان بھی مانگیں تو ہم دیں گے جس پر اپوزیشن بنچوں سے آوازیں آئیں ہم نہیں دینگے۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ کے سینئر مشیر ذوالفقار کھوسہ نے کہا کہ ایک خاتون نے صدر سے یہ بیان منسوب کیا ہے۔ شکوک و شبہات اس وقت پیدا ہوئے جب صدر نے کراچی میں ارسا کی میٹنگ کی اور اس میں پنجاب کے نمائندے کو نہیں بلایا گیا۔ وہ خاتون سندھ کابینہ کی وزیر ہیں تاہم مجھے یقین ہے کہ سینئر وزیر پنجاب کے مفاد کا تحفظ کرینگے۔