حکمرانوں نے میثاق جمہوریت پر عمل نہ کیا تو کشیدگی بڑھے گی: ساجد میر

لاہور (خصوصی رپورٹر) مرکزی جمعیت اہلحدیث پاکستان کے سربراہ سنیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ مہنگائی اور لوڈشیدنگ کے عذاب نے عوام کی مشکلات میں اضافہ کردیا ہے۔ حکومت اور عوام میں کشیدگی بڑھ رہی ہے۔ مشکلات پر فوری قابو نہ پایا گیا تو نتائج خطرناک نکل سکتے ہیں۔ پیپلز پارٹی اب عوام کی نہیں بلکہ اشرافیہ کی پارٹی بن چکی ہے۔ حکومت نے بجٹ میںعوام کو ریلیف دینے کی بجائے تکلیف دی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نوائے وقت سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ عوام اور حکومت میں کشیدگی کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔ جمہوری حکومت اتنی جلدی عوام کا اعتماد کھو دےگی۔ اسکا یقین نہیں تھا اور یہ سب کو جھوٹے وعدوں کی سزا مل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹیوں کے چکر سے نکل کر 17ویں ترمیم کا خاتمہ کیا جائے۔ اب بھی وقت ہے کہ حکمران اپنے وعدوں کی جانب لوٹ آئیں اور میثاق جمہوریت پر اس کی روح کے مطابق عمل کریں وگرنہ کشیدگی بڑھے گی جس کو کنٹرول کرنا حکومت کے بس میں نہیں رہیگا۔ انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف سے قرضہ لینے کے نتائج قوم کے سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں۔ بجلی،گیس کی قیمتوں میں اضافہ اسکی تازہ مثال ہے۔