امن و امان کے قیام سے بڑھ کر اور کوئی ترجیح نہیں : وزیراعلی پنجاب

لاہور (خبرنگار خصوصی) وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ موجودہ حالات میں امن و امان کے قیام سے بڑھ کر اورکوئی ترجیح نہیں ہوسکتی اور اس مقصد کے لئے نہ صرف پولیس کی جدید خطوط پر تربیت کی جارہی ہے بلکہ پولیس کے تربیتی سکولوں کی استعداد کار کو بھی بڑھایا جارہا ہے اور خصوصی ریفریشر کورسوں کا انعقاد کیاجارہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ دہشت گردی کے واقعات سے نمٹنے کے لئے انسداد دہشت گردی فورس اور کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے سریع الرد عمل فورس قائم کی جارہی ہے۔انہوںنے کہاکہ انسداد دہشت گردی کے لئے وضع کی گئی پالیسی پر صحیح معنوں میں عملدرآمد کو یقینی بنایاجائے اور دہشت گردی کے واقعات کے خاتمے کے لئے متعلقہ اداروں میں قریبی رابطوں کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ خفیہ معلومات اکٹھا کرنے والے اداروں کی کارکردگی کو بھی مزید موثر بنایاجائے۔ انہوں نے اس مقصد کے لئے ایک خصوصی سیل بھی تشکیل دینے کی ہدایت کی۔ یہ بات انہوں نے ایلیٹ ٹریننگ سکول بیدیاں میں انسداد دہشت گردی کے لئے پالیسی وضع کرنے ‘ پولیس تربیتی سکولوں کی کارکردگی اور صوبے میں امن و امان کی صورتحال کاجائزہ لینے کے لئے منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک کو اس وقت سنگین سکیورٹی مسائل کا سامنا ہے اور ملک کی سا لمیت اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی استعداد کار میں اضافہ اور اہلکاروں کی جدید خطوط پر تربیت و اسلحہ کی فراہمی وقت کا اہم ترین تقاضا ہے۔ انہوںنے کہا کہ پولیس کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے مانیٹرنگ کا موثر نظام اپنایا جائے اور سی آئی ڈی و سپیشل برانچ کی تنظیم نوکی جا رہی ہے تاکہ وہ اپنے فرائض بہتر طریقے سے سرانجام دے سکیں۔ انہوںنے کہا کہ امن و امان کے قیام میں پولیس تربیت کو بنیادی حیثیت حاصل ہے اور پنجاب میں تمام پولیس تربیت سکولوں میں بہترین و قابل افسران بطور پرنسپل تعینات کئے جائیں اور اس کلچر کو بھی تبدیل کیاجائے کہ تربیتی سکولوں میں تعیناتی غیر اہم ہے۔ انہوں نے تربیتی سکولوں میں توسیع وصلاحیتوں میں اضافے کے لئے کرنل (ر) شجاع خانزادہ کی سربراہی میں ایک خصوصی کمیٹی بھی تشکیل دینے کی ہدایت کی جو تمام سکولوں کی کارکردگی کا جائزہ لیکر اپنی سفارشات پیش کرے گی۔انہوں نے پولیس کو ایمونیشن ‘ بلٹ پروف جیکٹس کی فراہمی اور اس کی صلاحیتوں میں اضافے کے لئے تمام ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک مکمل پیکج سات روز میں پیش کرنے کی ہدایت کی تاکہ وفاقی حکومت سے اس ضمن میں فنڈز حاصل کئے جاسکیں۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے ہوم سیکرٹری کو ہدایت کی کہ صوبے میں تمام بڑے تجارتی ومالیاتی اداروں‘ جیولرز شاپس پر کلوز سرکٹ ٹی وی کیمروں کی تنصیب اور تربیت یافتہ و مستند سیکورٹی گارڈز کی تعیناتی کو سو فیصد یقینی بنایاجائے۔ وزیراعلی کی زیر صدارت اعلی سطحی اجلاس منعقد ہوا جس میں پانی کے مسئلے کے حوالے سے تمام پہلوؤں کا تفصیلی جائزہ لیاگیا۔ اجلاس میں سینئر وزیر راجہ ریاض احمد ، سینئر مشیرسردار ذوالفقار علی خان کھوسہ، صوبائی وزیر زراعت احمد علی اولکھ، چیف سیکرٹری ، سیکرٹری آبپاشی ، سیکرٹری زراعت او ردیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی ۔