سپریم کورٹ : انتخابات 2013ءکو کالعدم قرار دینے کی درخواست سماعت کیلئے منظور

سپریم کورٹ : انتخابات 2013ءکو کالعدم قرار دینے کی درخواست سماعت کیلئے منظور

اسلام آباد ( نمائندہ نوائے وقت ) سپریم کورٹ میں 2013ءکے عام انتخابات کو چیلنج کرنے کی درخواست سماعت کے لئے منظور کر لی گئی ، جسٹس ریٹائرڈ محمود اختر صدیق نے 2013ءکے انتخابات کو چیلنج کیا تھا۔چیف جسٹس ناصر الملک کی سر براہی میں 3رکنی بنچ 29اکتوبر کو سماعت کرے گا، عدالت عظمی کا تین رکنی بینچ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ناصرالملک ، جسٹس امیر ہانی مسلم اور جسٹس اعجاز احمد چوہدری پر مشتمل ہے ۔ یاد رہے کہ سپریم کورٹ کے سابق جج جسٹس محمود اخترشاہد صدیقی کی طرف سے محمد صدیق بلوچ ایڈووکیٹ کے توسط سے آئین کے آرٹیکل 184(3)کے تحت آئینی درخواست دائر کی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مارچ 2013میں ہونے والے عام انتخابات میں دھاندلی ثابت ہوچکی ہے اس لئے انتخابات کوکالعدم قرار دیا جائے ۔یہ درخواست 4اکتوبر 2014 کودائر کی گئی تھی جس میں وفاق اور الیکشن کمشن کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست گزار کا کہنا ہے کہ الیکشن کمشن مقناطیسی سیاہی مہیا کرنے میں ناکام رہا، مقناطیسی سیاہی نہ ہونے سے الیکشن کی شفافیت برقرار نہیں رہی۔ انتخابات کو مشکوک بنانے کا ذمہ دار الیکشن کمشن ہے ریٹرننگ افسران نہیں۔ درخواست گزار نے الیکشن کالعدم قرار دے کر ذمہ داروں کو سزا دینے کی استدعا کی ہے۔
درخواست منظور