کراچی میں شدید گرمی اور حبس نےبارہ سو شہریوں کی جان لے لی, قبرستانوں میں بھی جگہ کم پڑ گئی

خبریں ماخذ  |  خصوصی نامہ نگار
کراچی میں شدید گرمی اور حبس نےبارہ سو شہریوں کی جان لے لی,  قبرستانوں میں بھی جگہ کم پڑ گئی

کراچی میں بدترین گرمی اور لُو کی وجہ سے موت کارقص جاری ہے،قیامت خیز گرمی نےچار روز میں بارہ سو جانوں کونگل لیاہے،جب کہ گرمی،ہیٹ سٹروک اور ڈائریا سےمتاثرہ سیکڑوں مریض اب بھی ہسپتالوں میں پڑے ہیںجن کےلیے بسترکم پڑگئے ہیں-
حکام کےمطابق جاں بحق ہونےوالوں میں زیادہ ترچالیس سال سےزائد عمر کےافراد ہیں،جب کہ بچےبھی شکارہورہے ہیں،نیوکراچی،گلشن اقبال،سائٹ ،نارتھ کراچی ،صدر یا پھرمضافاتی علاقہ،غرض کوئی بھی جگہ ایسی نہیں ہے، جہاں سے ہیٹ سٹروک،ڈی ہائیڈریشن ،گیسٹرو اوردیگر بیماریوں میں مبتلا افراد ہسپتال نہ لائے گئے ہوں-
شہر کی صورت حال کےباعث پاک فوج کوبھی طلب کرلیاگیاہے،جس نے امدادی کیمپ بھی قائم کردیئے ہیں،دوسری طرف شہر میں بڑے پیمانے پرہلاکتوں کےباعث قبرستانوں کےدامن بھی تنگ پڑ گئے ہیں ،اور لوگوں کو اپنےپیاروں کی تدفین میں مشکلات کاسامنا کرنا پڑرہاہے-