بلاامتیاز کارروائی کرکے دہشتگردوں اور مجرموں کو ڈھونڈ نکالیں گے: وزیر اعظم ، آرمی چیف

بلاامتیاز کارروائی کرکے دہشتگردوں اور مجرموں کو ڈھونڈ نکالیں گے: وزیر اعظم ، آرمی چیف

اسلام آباد (بی بی سی + آن لائن + آئی این پی + نوائے وقت رپورٹ) وزیر اعظم نواز شریف اور برّی فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن ضربِ عضب کو ملک بھر میں بلارکاوٹ جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے۔ وزیر اعظم ہاؤس سے جاری بیان کے مطابق فیصلہ گزشتہ روز وزیر اعظم ہاؤس میں ہونے والی ملاقات میں کیا گیا جس میں ملکی سلامتی کی داخلی اور خارجی صورتحال پر بھی غور ہوا۔ ملاقات میں فیصلہ ہوا کہ جرائم پیشہ عناصر اور دہشت گردوں کے خلاف کارروائیوں کا سلسلہ جاری رہیگا تاکہ آپریشن ضرب عضب کی کامیابی سے پیدا ہونے والے ماحول سے بھرپور فائدہ اٹھایا جا سکے۔ ملاقات میں وزیرِ اعظم اور فوج کے سربراہ نے اس بات کا اعادہ بھی کیا کہ آپریشن ضرب عضب کو ہر قیمت پر اْس کے منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا اور بلاامتیاز کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردوں اور مجرموں کو ڈھونڈ نکالا جائے گا۔ اس موقعے پر نواز شریف کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پوری قوم مسلح افواج کے ساتھ کھڑی ہے۔ آن لائن کے مطابق فیصلہ کیا گیا کہ دہشت گردوں کا ہر قیمت پرخاتمہ کیا جائیگا، دہشت گردوں کے سہولت کاروں اور مالی معاونت کرنے والوں کو بھی قانون کے کٹہرے میں لائیں گے، ملک بھر میں قومی ایکشن پلان کے تحت جرائم پیشہ عناصر کیخلاف آپریشن جاری رہے گا اور آپریشن ضرب عضب کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ دونوں رہنمائوں نے دہشت گردوں کیخلاف جاری کارروائیوں پر اطمینان کا اظہار کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ کامیاب آپریشن ضرب عضب سے بنے ہوئے ماحول کا بھر پور فائدہ اٹھایا جائیگا اور ملک بھر میں دہشت گرد اور جرائم پیشہ عناصر جہاں بھی ہوں گے ان کو کٹہرے میں لایا جائیگا۔ آئی این پی کے مطابق ملاقات میں آرمی چیف نے وزیراعظم کو اپنے دورہ روس کے حوالے سے بھی بریف کیا۔ جبکہ ذرائع کا کہنا ہے کہ ملاقات میں سابق صدر آصف علی زرداری کی طرف سے پاک فوج کے بارے میں دیئے گئے متنازعہ بیان کا معاملہ بھی زیر غور آیا۔ وزیراعظم نے واضح کیا کہ کسی کو بھی قومی اداروں کو تنقید کا نشانہ بنانے سے گریز کرنا چاہئے۔ علاوہ ازیں وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ حکومت بجلی کی پیداوار بڑھانے میں خصوصی دلچسپی لے رہی ہے۔ اس وقت ملک میں بجلی کے کئی بڑے منصوبوں پر کام شروع ہے۔ ترجمان وزیر اعظم ہائوس کے مطابق چائنہ کی معروف کمپنی گروبا گروپ کے وفد نے چیف فنانس آفیسر رائو دان کی قیادت میں وزیر اعظم نواز شریف سے ملاقات کی جس میں ملک میں بجلی کے جاری منصوبوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ چینی کمپنی نے ملک میں ایل این جی او کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے میں دلچسپی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر وزیر اعظم نے کہا کہ توانائی کے شعبہ میں غیر ملکی سرمایہ کاری حوصلہ افزاء ہے۔ حکومت چینی کمپنیوں کی پاکستان میں سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کر رہی ہے۔ ملک میں اس وقت سب سے بڑا مسئلہ بجلی اور دہشت گردی کا ہے۔ حکومت ملک سے لوڈشیڈنگ اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے اور یہ مسائل حل کرنا ہماری ترجیحات میں شامل ہے۔ اس موقع پر گروبا گروپ کے وفد نے وزیر اعظم کے انرجی بحران کے خاتمے کے لئے اقدامات کو سراہا اور ملک میں بھرپور سرمایہ کاری کرنے پر دلچسپی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف، سیکرٹری پانی و بجلی اور چیئرمین واپڈا بھی موجود تھے۔