پاکستان پر جب بھی مشکل وقت آیا سعودی حکومت نے تعاون کیا: نواز شریف

لاہور (خبرنگار خصوصی) مسلم لیگ (ن) کے سربراہ نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان اور سعودی عرب مذہبی‘ ثقافتی اور تاریخی روابط میں جڑے ہوئے ہیں جو سرحدوں اور فرنٹیئرز تک محدود نہیں۔ سعودی عرب پاکستانی عوام کا دوسرا گھر ہے اور سعودی عرب کے جذبات بھی پاکستان اور پاکستانی عوام کیلئے ایسے ہی ہیں لہٰذا مستقبل میں بھی یہ روابط اور تعلقات مزید مضبوط ہوں گے۔ وہ گذشتہ روز رائیونڈ میں پاکستان میں نئے سعودی سفیر عبدالعزیز ابراہیم صالح الفرید کے اعزاز میں دیئے جانے والے ظہرانہ پر بات چیت کررہے تھے۔ ملاقات کے دوران دوطرفہ تعلقات‘ خطے کی صورتحال سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال ہوا۔ نئے سعودی سفیر نے کہا کہ وہ 25 سے زائد بار پاکستان آچکے ہیں اور ہم پاکستان کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں۔ ملاقات کے دوران شہباز شریف اور سعودی حکام بھی موجود تھے۔ اے پی پی کے مطابق نواز شریف نے امید ظاہر کی کہ سعودی عرب کے نئے سفیر عظیم روایات کو برقرار رکھتے ہوئے دونوں ممالک کی حکومتوں اور عوام میں تعلقات مزید مضبوط کرنے میں اہم کردار ادا کریں گے۔ سعودی حکومت اور عوام کے پاکستان کے ساتھ تعاون کوسراہتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ماضی میں سعودی عوام اور حکومتوں نے پاکستان کے عوام کے ساتھ مالی امداد سمیت ہر سطح پر تعاون کیا اور جب بھی پاکستان پر مشکل وقت آیا سعودی حکومت نے ہمیشہ پاکستان کے ساتھ تعاون کا ہاتھ بڑھایا جوکہ پاکستانی قوم کیلئے ناقابل فراموش ہے۔ نواز شریف نے کہا کہ سعودی عرب اور عوام کا پاکستان کی ترقی میں اہم کردار ہے جبکہ سعودی عرب میں پاکستان کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے کے ساتھ ساتھ پاکستانی قوم کو مالی معاونت بھی فراہم کی ہے جس سے ملک کے انفراسٹرکچر کی بہتری میں مدد ملی۔ سعودی سفیر مسلم لیگ (ن) اور اس کے قائد محمد نواز شریف کو ملک میں جمہوریت کی مضبوطی‘ استحکام‘ پارلیمنٹ میں مثبت اور مضبوط روایات متعارف کروانے پر خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب پاکستان کو تنہا نہیں چھوڑے گا اور ہر سطح پر تعاون جاری رکھے گا۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عوام اور حکومت پاکستانی قوم اور ملک کو خوشحال دیکھنا چاہتے ہیں۔