امریکہ پاکستان میں فوج کے بجائے تعلیم پر امداد خرچ کرتا تو حالات بہتر ہوتے: ہلیری

واشنگٹن (ثناءنےوز) امریکی وزیر خارجہ ہلیری کلنٹن نے کہا ہے کہ اگر امرےکہ پاکستان مےں فوج کے بجائے امداد کی مد مےں دئےے جانے 7 ارب ڈالر تعلیم پر خرچ کرتا اور پاکستان میں تعلیم میں سرمایہ کاری کی جاتی، تو لوگ انتہاپسندوں کے پاس بچے نہ بھیجتے اور آج پاکستانی عوام کی حالت بہتر ہوتے امریکی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے ہلیری کلنٹن نے کہا کہ پاکستان کو تعلیم کے شعبے میں سرمایہ کاری کرنی چاہیے۔ اگر پاکستان امریکہ سے ملنے والی امداد کو صرف فوج پر خرچ کرنے کی بجائے تعلیم میں سرمایہ کاری کرتا تو اس کی صورت حال آج بالکل مختلف ہوتی ۔ان کا کہنا تھا کہ سابق صدر پرویزمشرف کو بھی تعلیم کے شعبے میں سرمایہ کاری کے لئے کہا گیا تھا۔انہوں نے کہاکہ امرےکہ نے پاکستان کو 11 ستمبر کے بعد سے اب تک فوجی امداد کی مد مےں 7 ارب ڈالر دئےے جس کی وجہ سے پاکستان امرےکہ کا فرنٹ لائن اتحادی بن گےا۔