کشمیر ہمارے لئے زندگی اور موت کا مسئلہ‘ اس سے پاکستان کی بقاءوابستہ ہے : وزیراعظم یوسف رضا گیلانی

کشمیر ہمارے لئے زندگی اور موت کا مسئلہ‘ اس سے پاکستان کی بقاءوابستہ ہے : وزیراعظم یوسف رضا گیلانی

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی + لیڈی رپورٹر + ایجنسیاں) وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر سے پاکستان کی بقا وابستہ اور ہمارے لئے یہ زندگی اور موت کا مسئلہ ہے‘ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین پامالی کے خلاف ایوان نے بھی قرارداد منظور کی۔ عالمی برادری میں بھی احساس اجاگر ہوا ہے۔ مسئلہ کشمیر ہمارے لئے انتہائی اہم ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیاں ہو رہی ہیں‘ پہلی بار کشمیر کمیٹی کے چیئرمین جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کر رہے ہیں جس سے کشمیر کاز کو تقویت ملے گی۔ قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کی مذمت کرتے ہیں۔ ملکی دفاع سے متعلق امور پر میڈیا ذمہ دارانہ کردار ادا کرے۔ صحافیوں کے وفد سے گفتگو میں وزیراعظم نے صحافیوں کے لئے 5 کروڑ روپے کی مالیت سے ریلیف فنڈ کے قیام کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ صحافیوں کے تمام مطالبات اور ان کو درپیش مسائل جلد از جلد حل کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا سیلاب زدگان کے مسائل کو اجاگر کرنے کے لئے کردار ادا کرتا رہے تاکہ ان کے حل کے لئے مناسب اقدامات کئے جا سکیں۔ ہاوس بلڈنگ فنانس کارپوریشن کے مینجنگ ڈائریکٹر اظہر اے جعفری نے ملاقات کی اور دس کروڑ کا امدادی چیک پیش کیا۔ دریں اثناءوزیراعظم سے ارکان قومی اسمبلی کے وفد نے ملاقات کی۔ وزیراعظم نے منتخب نمائندوں پر زور دیا کہ وہ اپنے حلقوں کا دورہ کریں اور متاثرہ عوام کے مسائل کو حل کریں۔ وزیراعظم نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کو متفقہ طور پر کشمیر کمیٹی کا سربراہ منتخب کیا ہے اس لئے ہم پورے مینڈیٹ سے اقوام متحدہ جائیں گے۔ مولانا فضل الرحمن کے بیرونی دورے سے مسئلہ کشمیر پر پاکستان کا اصولی موقف اجاگر ہو گا۔عالمی یوم امن پر پیغام میں وزیراعظم نے کہا کہ قدامت پسندی اور انتہا پسند قوتوں کے خلاف اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے۔ ہم نان سٹیٹ ایکٹرز کو مذہبی عقائد ہائی جیک کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ وزیراعظم نے کہا کہ بڑا خطرہ غیر ریاستی عناصر سے ہے جو مختلف ہتھکنڈوں کے ذریعے بین الاقوامی ایجنڈے کو مسلط کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ وزیراعظم سے قطر کی المینائی گروپ آف کمپنیز کے چیئرمین شیخ احمد عبداللہ عیسی المینائی نے ملاقات کی۔ وزیراعظم نے تجویز کیا کہ المینائی گروپ ہر صوبے میں ایک ایک گاوں کی تعمیرنو کرے اور یہ ماڈل ہو گا۔ احمد عبداللہ نے وزیراعظم سے اظہار ہمدردی کیا۔ یورپی پارلیمنٹ کے رکن سجاد کریم سے گفتگو میں وزیراعظم نے یورپی یونین کی جانب سے پاکستان کے لئے خصوصی ڈبلیو ٹی او رعایت کے حصول کے ذریعے اپنے رکن ممالک کی منڈیوں تک پاکستان کو بہتر رسائی دینے کے فیصلہ کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ اس فیصلہ سے پاکستان کی اقتصادیات کی بحالی کے علاوہ یورپی منڈیوں میں پاکستان کو اپنے ممکنہ حصہ کو دوبارہ حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔