سوات آپریشن کے دوران ازبک اور غیر مسلم گورکھے بھی ہلاک ہوئے: رپورٹ

اسلام آباد (نیٹ نیوز) سکیورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران ازبک اور غیرمسلم گورکھے بھی ہلاک ہوئے ہیں۔ ان کی تصاویر پاک الرٹ ویب سائٹ پر جاری کی گئی ہیں اور اس سلسلے میں ایک مفصل رپورٹ بھی دی گئی ہے۔ ان تصاویر سے ظاہر ہوتا ہے کہ ہلاک ہونیوالے ان افراد کے ختنے بھی نہیں ہوئے۔ اسکے علاوہ ان کے چہروں کے خدوخال سے ثابت ہوتا ہے کہ گورکھا جنگجو ہوسکتے ہیں جنہیں بھارتی اور برطانوی افواج پہاڑی علاقوں میں لڑنے کیلئے استعمال کرتے تھے۔ امریکی فوج نے بھی ان میں سے بعض کی خدمات حاصل کررکھی ہیں۔ تصاویر سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ ہلاک ہونیوالے دہشت گردوں میں سے بعض کا تعلق افغانستان میں عبدالرشید دوستم کی ملیشیا سے ہے جو افغانستان میں قابض امریکی فوج اور کابل کی کٹھ پتلی حکومت کے اتحادی ہیں۔ رپورٹ کے مطابق سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ آئی ایس پی آر ایسی تصاویر پاکستانی میڈیا کیلئے کیوں جاری نہیں کرتا؟ یہ تصاویر اس بات کا سب سے بڑا ثبوت ہیں کہ بھارت نہ صرف پاکستانیوں کو ہلاک کرنے کیلئے طالبان کے بھیس میں بے رحم دہشت گردوں کو بھیج رہا ہے بلکہ حقیقی بھارتی سوات میں پاکستانی طالبان کی صفوں میں شامل ہو کر پاکستانی فوج کیخلاف لڑ رہے ہیں۔