چینی صدر کا دورہ‘ سیاسی و عوامی حلقوں کا وزیر داخلہ کی عدم موجودگی کا نوٹس

چینی صدر کا دورہ‘ سیاسی و عوامی حلقوں کا وزیر داخلہ کی عدم موجودگی کا نوٹس

اسلام آباد (محمد نواز رضا/ وقائع نگار خصوصی) سیاسی و عوامی حلقوں میں عوامی جمہوریہ چین کے صدر شی چن پنگ کے دورہ پاکستان کے دوران وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کی عدم موجودگی کا نوٹس لیا ہے۔ چینی صدر کی نورخان ائربیس پر آمد کے موقع پر صدر مملکت‘ وزیراعظم‘ مسلح افواج کے سربراہان اور وفاقی کابینہ کے ارکان بھی موجود تھے لیکن ان میں چودھری نثار علی خان نہیں تھے جبکہ نور خان ائربیس پر اسلام آباد سے قومی اسمبلی کے رکن طارق فضل چودھری موجود تھے جو وزیراعظم ہاؤس سے ہیلی کاپٹر کے ذریعے نورخان ائربیس پر پہنچے۔ اسی طرح وزیراعظم ہاؤس میں مختلف سمجھوتوں پر دستخط کرنے کی تقاریب اور وزیراعظم کی جانب سے چینی صدر کے اعزاز میں دی جانے والی ضیافت میں بھی وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کی ’’عدم شرکت‘‘ کے بارے میں قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں۔ وزیر داخلہ سارا دن پنجاب ہاؤس میں رہے اور اپنے سرکاری فرائض انجام دیتے رہے‘ شام کو اپنی رہائش گاہ پر چلے گئے۔ چودھری نثار علی خان جو پارلیمنٹ میں وزیراعظم کے ’’اوپننگ بیٹسمین‘‘ کی شہرت رکھتے ہیں سیاسی منظر پر کہیں نظر نہیں آ رہے۔