وزیراعظم اور چینی صدر نے آٹھ منصوبوں کی نقاب کشائی کی اور ویڈیو لنک کے ذریعے بجلی کے پانچ منصوبوں کا افتتاح کیا

وزیراعظم  اور چینی صدر  نے آٹھ منصوبوں کی نقاب کشائی کی اور ویڈیو لنک کے ذریعے بجلی کے پانچ منصوبوں کا افتتاح کیا

پاک چین دوستی نئی بلندیوں پر پہنچ گئی، پاکستان اور چین کے درمیان وزیراعظم ہاوس میں وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے، جس میں پاکستانی وفد کی قیادت وزیراعظم نوازشریف جب کہ شی چن پنگ چینی وفد کی قیادت کی۔ مذاکرات میں دونوں ممالک کے درمیان معاشی، اقتصادی، تجارتی امور کے علاوہ دفاعی اور اسٹریٹجک معاملات پر غور کیا گی، جس کے بعد پروقار تقریب میں دونوں ممالک کے درمیان اربوں ڈالر کے متعدد منصوبوں پر دستخط ہوئے ، تقریب میں اعلیٰ حکام ، وزرا اور اہم شخصیات نے شرکت کی ، وزیراعظم نوازشریف اورچینی صدرشی چن پنگ نے ویڈیو لنک کے ذریعے بجلی کے پانچ منصوبوں کا افتتاح کیا۔ جن میں پنجاب میں نو سو میگا واٹ کےشمسی توانائی کا منصوبہ ،سات سو بیس میگاواٹ کاکروٹ پن بجلی منصوبہ  ہوا سے بجلی پیدا کرنے والے داؤد  جھمپیر اور سچل منصوبے شامل ہیں ،اس کے علاوہ دونوں رہنماوں نے آٹھ منصوبوں کی نقاب کشائی کی گئی ، جن منصوبوں کا افتتاح کیا گیا ان میں بہاولپور میں سو میگاواٹ کے سولر پارک، اسلام آباد میں ایف ایم ریڈیو نائنٹی ایٹ دوستی چینل، ڈی ٹی ایم بی براڈکاسٹنگ ،اسمال ہائیڈرو پاور مشترکہ ریسرچ، پاک چین ثقافتی مرکز کے قیام،انڈسٹریل اینڈ کمرشل بینک آف چائنا کی لاہور برانچ، میٹرو اورنج لائن ریلوے اور آپٹیکل فائبر کیبل منصوبہ شامل ہیں، پاکستان اور چین کے درمیان مفاہمت کی اکاون یادداشتوں پر بھی دستخط کیے گئے۔  جن میں پاک چین اقتصادی تکنیکی معاہدہ، شاہراہ قراقرم کی اپ گریڈیشن،منشیات کی روک تھام قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ساز و سامان کی فراہمی، موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کیلئے ساز و سامان  گوادر ایکسپریس وے، لاہور کراچی موٹروے کی تعمیر، گوادر اسپتال، لاہور میٹرو اورنج لائن میٹرو ٹرین پروجیکٹ کی مالی معاونت، گوادر انٹرنیشنل ائیرپورٹ سمیت دیگر اہم معاہدے شامل ہیں، چینی کمپنیاں اٹھارہ ارب ڈالر کی سرمایہ کاری بھی کرینگ