کیاورلڈ کپ کے بعد پاکستانی ٹیم یرغمالیوں کے ہاتھوں سے آزاد ہوگی؟

کیاورلڈ کپ کے  بعد پاکستانی ٹیم یرغمالیوں کے ہاتھوں سے آزاد ہوگی؟

اوپنر احمد شہزاد  کارکردگی صفرعمر اکمل  کارکردگی صفرصہیب مقصود  کارکردگی زیروعمر رسیدہ کھلاڑی یونس خان بھی چلے ہوئے کارتوس۔قومی ٹیم پر چند مخصوص کھلاڑیوں کا قبضہ ہے  جو مسلسل قوم کی امیدوں پر پانی پھیرنے اور رسوائیوں کی داستانیں رقم کرنے میں مصروف ہیں پسند نا پسند کی بنیاد پر بھرتی کئے جانے والے یہ کھلاڑی اپنی انہیں حرکات اور بار بار قوم کا بھروسہ توڑنے کے بعد بھی قومی ٹیم کا حصہ ہیںاگر احمد شہزاد کی بات کی جائے تو جب سے وہ ٹیم میں آئے ان کا رویہ غیر سنجیدہ نظر آیا،بھارتی سٹرائیکر ورات کوہلی کے ساتھ ڈیبیو کرنے والے عمر اکمل بھی آج تک کوئی کارنامہ سرانجام نہیں دے پائے،ادھر ادھیڑ عمر بیٹسمین یونس خان پہلے ہی ریٹائرمنٹ نہ دینے پر بضد ہیں، مصباح الحق اور شاہد آفریدی تو ہو گئے اب ریٹائر لیکن دیگر کھلاڑیوں کا کیا تنقیدکے بعد کچھ دنوں کیلئے شائد قومی سکواڈ سے ڈراپ ہوجائیں لیکن پھر کسی سیریز میں قوم کو وہی چہرے دیکھنے کو ملیں گے