شہباز شریف کی اپیل مسترد، عوامی تحریک کی مقدمہ کیلئے درخواست، 21 افراد نامزد ہونے والوں میں نواز شریف شہباز شریف، لیگی رہنما اور پولیس افسر بھی شامل

شہباز شریف کی اپیل مسترد، عوامی تحریک کی مقدمہ کیلئے درخواست، 21 افراد  نامزد ہونے والوں میں نواز شریف  شہباز شریف، لیگی رہنما اور پولیس افسر بھی شامل

لاہور (نامہ نگار + آئی این پی + نوائے وقت رپورٹ) تحریک منہاج القرآن نے جوڈیشل کمشن کے بائیکاٹ کے خاتمے کے لئے وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی اپیل کو مسترد کر دیا۔ جبکہ پاکستان عوامی تحریک نے سانحہ ماڈل ٹائون کا وزیراعظم نواز شریف، وزیراعلیٰ شہباز شریف، حمزہ شہباز، وزیر قانون رانا ثناء اللہ، آئی جی پنجاب مشتاق احمد سکھیرا سمیت 21 وزرائ، پولیس افسران اور دیگر شخصیات کیخلاف مقدمہ کے اندراج کیلئے تھانہ فیصل ٹائون میں درخواست دیدی ہے۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ میاں شہباز شریف نے جمعرات کے روز تحریک منہاج القرآن کی انتظامیہ سے اپیل کی کہ وہ انصاف اور ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لئے جوڈیشل کمشن کے جاری بائیکاٹ کو ختم کر دیں اور کمشن کے سامنے پیش ہو کر اپنا جو بھی موقف اور ثبوت رکھتے ہیں، لیکن اس کے جواب میں تحریک منہاج القرآن کے ترجمان نے وزیر اعلیٰ کی اپیل کو مسترد کر دیا ہے اور ان کا کہنا ہے کہ جب ہمیں کمشن کے قیام پر اعتماد ہی نہیں تو ہم اس کے سامنے کیوں پیش ہوں؟ ہم کسی بھی صورت کمشن کے سامنے پیش نہیں ہوں گے ، ہم صرف اللہ تعالیٰ سے انصاف مانگ رہے ہیں جو ہمیں ضرور ملے گا۔ علاوہ ازیں پاکستان عوامی تحریک کے وفد جن میں تحریک منہاج القرآن کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر رحیق عباسی، ڈائریکٹر ایڈمن جواد حامد، (ق) لیگ کے رہنما  کامل علی آغا،  وکلاء اور دیگر افراد شامل تھے۔ انہوں نے تھانہ فیصل ٹائون جاکر سانحہ ماڈل ٹائون کا مقدمہ درج کرنے کے لئے ڈائریکٹر ایڈمن جواد حامد کی جانب درخواست دے دی۔ درخواست میں واقعہ کا ذمہ دار وزیراعظم پاکستان نواز شریف، وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف، مسلم لیگ (ن) کے رہنما و ایم این اے حمزہ شہباز، وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق، وزیر مملکت پانی و بجلی عابد شیر علی، وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید، وفاقی وزیر دفاع خواجہ محمد آصف، صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ، سابق سی سی پی او لاہور چودھری شفیق احمد، سابق قائم مقام ڈی آئی جی آپریشنز رانا عبدالجبار، سابق ایس پی ماڈل ٹائون طارق عزیز، ایس ایچ او فیصل ٹائون رضوان قادر ہاشمی، ایس ایچ او ماڈل ٹائون ریحان گلو بٹ سمیت 21 افراد شامل ہیں۔ فیصل ٹائون پولیس نے ان افراد کے خلاف مقدمہ کے اندراج کے لئے پیش کی گئی درخواست موصول کرلی ہے مگر تاحال اس پر کوئی کارروائی نہیں کی گئی ہے۔ مقامی پولیس کے مطابق اعلیٰ پولیس حکام کے احکامات کے بعد کارروائی کی جائے گی۔ علاوہ ازیں یاد رہے کہ سانحہ ماڈل ٹائون کا پولیس پہلے ہی ایس ایچ او فیصل ٹائون رضوان قادر ہاشمی کی مدعیت میں 3 ہزار سے زائد افراد کے خلاف مقدمہ درج کرچکی ہے۔