انسانیت کے نام پر اپیل ہے منہاج القرآن کی انتظامیہ جوڈیشل کمشن کے بائیکاٹ کا فیصلہ واپس لے: شہباز شریف

انسانیت کے نام پر اپیل ہے منہاج القرآن کی انتظامیہ جوڈیشل کمشن کے بائیکاٹ کا فیصلہ واپس لے: شہباز شریف

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ دو روز قبل پولیس کے ساتھ تصادم میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع کے المناک واقعہ کے حوالے سے انصاف کے تقاضے ہر قیمت پر پورے کئے جائیں گے اور اس اندوہناک واقعہ کے ذمہ دار سزا سے نہیں بچ سکیں گے۔ وہ ارکان اسمبلی کے ایک وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو کر رہے تھے۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا کہ پولیس کے ساتھ تصادم کے باعث قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر شدید صدمہ پہنچا ہے اور میرا دل بہت غمزدہ ہے۔ مجھے جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین، عوامی تحریک کے قائدین اور کارکنوں کے جذبات کا مکمل احساس ہے۔ اندوہناک واقعہ کی جوڈیشل انکوائری کیلئے عدالتی کمشن نے کام شروع کر دیا ہے اور انشاء اللہ عدالتی کمشن کی تحقیقات کے نتیجے میں حقائق جلد قوم کے سامنے آئیں گے۔ عدالتی کمشن کی رپورٹ پر من و عن عمل کیا جائے گا اور ذمہ دار کسی بھی صورت قرار واقعی سزا سے بچ نہیں پائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا ماضی گواہ ہے مسلم لیگ (ن) نے کبھی بھی لاٹھی گولی کی سیاست نہیں کی، ہم نے ہمیشہ عوام کی خدمت اور شرافت کو اپنا اوڑھنا بچھونا بنایا ہے اور آئندہ بھی خدمت خلق اور شرافت کی سیاست ہی کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف اس بات کو برداشت نہیں کر سکتا کہ رکاوٹیں ہٹانے کیلئے عوام پر ظلم کیا جائے۔ انصاف اور قانون کے راستے میں کوئی رکاوٹ نہیں آنے دینگے اور زخمیوں کے ریکارڈ میں بھی ردوبدل کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا اور اس سلسلے میں پولیس کی اعلیٰ قیادت اور صوبائی انتظامیہ کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں انصاف اور انسانیت کے نام پر منہاج القرآن کی انتظامیہ سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ جوڈیشل کمشن کے بائیکاٹ کا فیصلہ واپس لے لیں کیونکہ عدالتی عمل ہی انصاف کے حصول کا واحد ذریعہ ہے اور اس کا بائیکاٹ مرحومین اور ان کے لواحقین کے ساتھ ناانصافی ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ میں متاثرین کو ہر قیمت پر انصاف دلانے کا تہیہ کئے ہوئے ہوں اور انسانی جانوں کے ضیاع کے ذمہ داروں کو سزا دلانے کیلئے کمشن کے ساتھ تعاون ضروری ہے۔ ادارہ منہاج القرآن کی جانب سے تعزیت کیلئے ہمارے وزراء کے وفد سے ملاقات نہ کرنے کے باوجود پنجاب حکومت انصاف کے تمام تقاضے پورے کریگی۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت نے عوام کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے میگا پراجیکٹ تیار کیا ہے۔ نئے مالی سال کے بجٹ میں صاف پانی پراجیکٹ کیلئے 5 ارب روپے کی رقم مختص کی گئی ہے۔ عوام کو بیماریوں سے محفوظ رکھنے کیلئے پینے کے صاف پانی کی فراہمی نہایت ضروری ہے اور یہی وجہ ہے کہ آئندہ چار برس کے دوران پنجاب بھر میں صاف پانی کی فراہمی یقینی بنانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پینے کے صاف پانی اور واٹر ٹریٹمنٹ سے متعلق بین الاقوامی کمپنی ’’اینٹا‘‘ کے صدر اوزی سیزر  سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ شہباز شریف نے اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت عوام کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کیلئے مربوط پروگرام پر مرحلہ وار عمل کر رہی ہے۔ پہلے مرحلے میں پنجاب کے مختلف علاقوں میں واٹر فلٹریشن پلانٹس لگائے جا رہے ہیں اور آئندہ چار برس تک ہر شہری تک پینے کی صاف پانی کی فراہمی یقینی بنائی جائے گی۔ ترکی کی واٹر ٹریٹمنٹ کے بارے میں بین الاقوامی کمپنی کی جانب سے پینے کے صاف پانی کی فراہمی اور انڈسٹریل ویسٹ واٹر کی ٹریٹمنٹ کیلئے تعاون کا خیرمقدم کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ صنعتوں کے آلودہ پانی کی ٹریٹمنٹ کے حوالے سے بھی بین الاقوامی کمپنی تعاون کر سکتی ہے۔