امریکی پابندیوں کا خدشہ‘ حکومت نے ایران کیساتھ گیس منصوبہ ختم کرنیکا فیصلہ کر لیا

امریکی پابندیوں کا خدشہ‘ حکومت نے ایران کیساتھ گیس منصوبہ ختم کرنیکا فیصلہ کر لیا

اسلام آ باد (این این آئی+ آن لائن) پاکستان نے ایران کو باضابطہ طور پر آگاہ کرنیکا فیصلہ کیا ہے کہ امریکی پابندیوں کے خدشے کے پیش نظر گیس پائپ لائن منصوبے کو آگے نہیں بڑھایا جا سکتا، دفتر خارجہ نے بھی ایران کو یہ پیغام پہنچانے کی اجازت دےدی، وفد رواں ماہ کے آخرمیں ایران کو آگاہ کرنے کے لیے تہران روانہ ہوگا، انگریزی اخبار نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ پاکستانی وفد اس ماہ کے آخر میں تہران جائیگا جو ایرانی حکام کو بتائے گا کہ پاک، ایران گیس منصوبہ ناقابل عمل ہے۔ آن لائن کے مطابق وفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے گیس منصوبے کو آگے بڑھانے پر حکومت کی معذوری ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ منصوبے کو ختم کرنے کی باتیں کوئی نئی نہیں، ایران کو اس بارے دسمبر میں آگاہ کردیا گیا تھا، منصوبے کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ امریکہ اور یورپی یونین کی پابندیاں ہیں، دوسری جانب دفتر خارجہ نے اس حوالے سے تصدیق کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمارے پاس منصوبے کو ختم سے متعلق ایران کو آگاہ کرنے بارے کوئی اطلاع نہیں۔ آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا ہے کہ فنڈز عالمی ای پی سی کنٹریکٹرز اور منصوبے کی تعمیر کیلئے ضروری سامان دستیاب نہیں تھا۔ وزیر پٹرولیم نے کہا کہ پاکستان اور ایران کے ماہرین اس بات پر متفق تھے کہ ماہرین کی دوبارہ ملاقات ہوگی تاکہ منصوبے کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو زیر بحث لا کر حل تجویز کر سکیں ماہرین کا اجلاس اس ماہ متوقع ہے۔
گیس منصوبہ