روس پاکستان اور ایران گیس منصوبے میں معاونت پر رضا مند‘ بجلی بھی فراہم کرے گا

روس پاکستان اور ایران گیس منصوبے میں معاونت پر رضا مند‘ بجلی بھی فراہم کرے گا

اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ + آن لائن + این این آئی) روس، ایران اور پاکستان گیس منصوبے میں معاونت فراہم کرنے پر رضامند ہو گیا۔ وزارت پٹرولیم کے مطابق روس منصوبے کے ذریعے پاکستان کو بجلی فراہم کرنے پر تیار ہے اور روس کی توانائی شعبے میں معاونت کا مثبت جواب دیا گیا ہے۔ روس تھرکول سے بجلی کی پیداوار کے لئے ٹیکنالوجی فراہم کرنے پر بھی رضامند ہے۔ قبل ازیں آن لائن کے مطابق وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان میں توانائی کے شعبہ خاص طور پر تیل و گیس کے شعبے میں سرمایہ کاری کے بے پناہ مواقع موجود ہیں، یہ بات انہوں نے روسی وفد سے ملاقات کے دوران کہی، جس کی سربراہی  روسی نائب وزیر پٹرولیم یورے سینٹ پارین کر رہے ہیں، وفاقی وزیر نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان معاہدے سے پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد ملے گی، روسی وفد نے وزیر مملکت برائے گیس و قدرتی وسائل جام کمال خان کی سربراہی میں پاکستانی وفد سے بھی ملاقات کی۔ اس موقع پر وزیر مملکت نے کہا کہ پاکستان میں آئل اور گیس کے 70 فیصد سے زائد ذخائر کو ابھی تک استعمال میں نہیں لایا جا سکا، انہوں نے مزید کہا کہ توانائی نہ صرف پاکستان بلکہ پورے جنوبی ایشیا کی ضرورت ہے، روسی وفد نے پاکستان کی دوستانہ اور سرمایہ دارانہ پالیسیوں پر اطمینان کا اظہار کیا اور اتفاق کیا کہ دوطرفہ معاہدے کی تفصیلات طے کرنے کے لئے ایک مشترکہ کمیٹی قائم کی جائے گی۔ این این آئی کے مطابق روس نے پاکستان میں توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے حکومت کی سرمایہ کار دوست اور آزادانہ پالیسیوں کو سراہا ہے۔