انٹیلی جنس ادارے ملزموں سے خوفزدہ ہیں یا سراغ نہیں لگا سکتے: مگسی

 انٹیلی جنس ادارے ملزموں سے خوفزدہ ہیں یا سراغ نہیں لگا سکتے: مگسی


جاں بحق افراد کے لواحقین کیلئے 10 لاکھ فی کس مالی امداد، دہشت گردوں کی نشاندہی پر ایک کروڑ کا انعام
کوئٹہ (بیورو رپورٹ) گورنر بلوچستان ذوالفقار مگسی نے کمبائنڈ ملٹری ہسپتال کا دورہ کیا اور بم دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کی عیادت کی۔ نجی ٹی وی کے مطابق گورنر نے جاں بحق افراد کے لواحقین کیلئے فی کس دس لاکھ روپے مالی امداد کا اعلان کیا اور ہدایت کی کہ زخمیوں کو بہتر طبی امداد کیلئے فوراً کراچی منتقل کیا جائے۔ گورنر نے کہا کہ کوئٹہ دھماکے میں ملوث دہشت گردوں کی نشاندہی کرنے والے کو ایک کروڑ روپے انعام دیا جائے گا۔ صوبے میں سرکاری سطح پر آج یوم سوگ منایا جائے گا۔ قومی پرچم سرنگوں رہے گا۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر ذوالفقار مگسی نے کہا کہ کوئٹہ میں دھماکہ سکیورٹی اداروں کی ناکامی ہے۔ پہلے بھی انتظامی تبدیلیاں کیں اب بھی کرینگے جبکہ قانون نافذ کرنے والے ادارے ناکام ہو گئے۔ ادارے ملزموں سے خوفزدہ ہیں یا ان کا سراغ نہیں لگا سکے۔گورنر بلوچستان نے کہا کہ سکیورٹی فورسز بلوچستان میں امن و امان کے قیام کی ذمہ داری نبھانے میں مکمل طورپر ناکام نظر آرہی ہیںکوئٹہ بم دھماکہ انٹیلی جنس اداروں کی ناکامی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے آپس میں رابطوںکے فقدان کا نتیجہ ہے۔ صوبے میں پائیدار قیام امن کیلئے انتظامی تبدیلیوں سمیت دیگر امور پر نظرثانی کی جارہی ہے اس سے پہلے بھی مذاکرات کے ذریعے مسائل کاحل تلاش کیا جاتا رہا ہے اوراب بھی متاثرہ خاندانوں سے پرامن رہنے کی اپیل کرتا ہوں۔
گورنر مگسی